طالبہ کے اغواء کے الزام میں ہائیکورٹ وکیل شلپا زیرحراست

طالبہ کی والدہ نے الزام عائد کیا کہ سی ایم ایس قائدین دیویندر، سواپنا، شلپا اور دیگر ہمارے گھرآئے تھے اور رادھا کو یہ کہتے ہوئے لے کر چلے گئے تھے کہ ہمارے علاج کیلئے رادھا کی ضرورت ہے۔ اس کے بعد رادھا دوبارہ گھر واپس نہیں لوٹی۔

حیدرآباد: نیشنل انوسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) نے جمعرات کے روز حیدرآباد میں تلنگانہ ہائی کورٹ کی ایک وکیل کوحراست میں لے لیا جن پر نرسنگ کی ایک طالبہ کے اغواء کا الزام ہے۔ این آئی اے عہدیداروں نے اپل کے چلکا نگر علاقہ میں تلاشی کے بعد شلپا کو حراست میں لے لیا اور انہیں حیدرآباد کے این آئی اے علاقائی دفتر منتقل کردیا گیا جہاں این آئی اے عہدیدار شلپا سے پوچھتا کرہے ہیں۔

 نرسنگ کی طالبہ رادھا کی ماں کی شکایت پر پہلے ہی وشاکھا پٹنم پولیس نے ایک کیس درج کرلیا تھا۔ اس کیس کی اساس پر این آئی اے نے شلپا اور دیگر کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی ہے۔ رادھا گذشتہ4برس سے لاپتہ بتائی گئی ہے۔ اس طالبہ کی ماں پلے پتی پوچماں نے الزام عائد کیا کہ چیتنیہ مہیلا سنگم (سی ایم ایس) کے قائدین نے میری بیٹی کا اغواء کیا ہے اور اسے زبردستی ماوسٹ میں بھرتی کرایا ہے۔

طالبہ کی والدہ نے الزام عائد کیا کہ سی ایم ایس قائدین دیویندر، سواپنا، شلپا اور دیگر ہمارے گھرآئے تھے اور رادھا کو یہ کہتے ہوئے لے کر چلے گئے تھے کہ ہمارے علاج کیلئے رادھا کی ضرورت ہے۔ اس کے بعد رادھا دوبارہ گھر واپس نہیں لوٹی۔ بعد میں ہمیں معلوم ہوا ہے کہ وہ ماوسٹ تحریک میں شامل ہوچکی ہے اور وہ ضلع وشاکھا پٹنم کے پدابائیلو کے جنگل علاقہ میں ماؤسٹ کے اعلیٰ قائدین کے ساتھ تنظیم کے لئے کام کررہی ہے۔

این آئی اے حکام نے جمعرات کے روز ضلع میدک کے چیہ گنٹہ میں ماوسٹ کے ایک اعلیٰ قائد کے فرزند دوباشی شنکر کے مکان کی تلاشی لی۔ جسے اڈیشہ پولیس نے گذشتہ سمیتی میں گرفتار کیا ہے۔ پدابائیلو پولیس کی جانب سے درج کیس کی بنیاد پر این آئی اے عہدیداروں نے 3جون کو ایک ایف آئی آر درج کی ہے۔

دریں اثنا وکیل شلپا کے افراد خاندان نے این آئی اے کی تلاشی اور شلپا کی گرفتاری کی مذمت کی اور کہا کہ نوٹس کے بغیر شلپا کو حراست میں لے لیا گیا۔ حقیقت یہ ہے کہ شلپانے طویل عرصہ قبل ہی شلپا نے سی ایم سی سے ترک تعلق کرلیا تھا۔

اس کے خلاف درج کیس کو فرضی قرار دیتے ہوئے شلپا کے خلاف سازش رچنے کا الزام عائد کیا ہے۔ شلپا کے شوہر بنڈی کرن نے کہا کہ ماضی میں بھی شلپا کے خلاف اس طرح کا فرضی کیس تیار کیا تھا اور وہ 7ماہ تک جیل میں تھی۔

تبصرہ کریں

Back to top button