فیس بک نے ملٹ ٹائمز کا پیج بغیر کسی اطلاع کے ڈیلیٹ کردیا

ملت ٹائمز کی ریلیز کے مطابق 13 دسمبر کو رات 8 بجے ملت ٹائمز کے شو دیش کے ساتھ کا پوسٹراور موضوع پوسٹ کرنے کے کچھ دیر بعد ہی فیس بک نے اپنے یہاں سے بغیر کسی اطلاع کے پیج کو ہی ہٹادیا۔

نئی دہلی: فیس بک نے معروف نیوز پورٹل ملت ٹائمز کا آفیشیل فیس بک پیج اپنے یہاں سے ڈیلیٹ کردیا ہے جبکہ ملت ٹائمز فیس بک کے تمام گائیڈ لائنز کی پابندی کررہا تھا۔ ۔یہ بات ملت ٹائمز نے آج یہاں جاری ایک ریلیز میں کہی ہے۔

ریلیز کے مطابق فیس بک نے 13 دسمبر 2021 بروز پیر شام ساڑھے سات بجے اپنے یہاں سے ملت ٹائمز کا فیس بک پیج ڈیلیٹ کردیاہے۔ ملت ٹائمز نے یہ بھی بتایاکہ فیس بک نے بغیر کسی اطلاع اور نوٹس کے اچانک ملت ٹائمز کا پیج ڈیلیٹ کردیاہے۔

ملت ٹائمز کی ریلیز کے مطابق 13 دسمبر کو رات 8 بجے ملت ٹائمز کے شو دیش کے ساتھ کا پوسٹراور موضوع پوسٹ کرنے کے کچھ دیر بعد ہی فیس بک نے اپنے یہاں سے بغیر کسی اطلاع کے پیج کو ہی ہٹادیا۔

یہ پوسٹ تھا ”مسلمانوں کے نماز پڑھنے پر پابندی اور دسرے مذاہب کے ماننے والوں کو سب کچھ کرنے کی اجازت۔ سیکولر بھارت میں یہ دوقانون کیوں؟“ اس ٹائٹل کے پوسٹ کرنے کے کچھ دیر بعد ہی فیس بک پیج ڈیلیٹ ہوگیا اور سرچ کرنے پر نظر نہیں آرہاتھا۔

لنک کے ذریعہ سرچ کرنے پر لکھ کر آنے لگا، یہ پیج موجود نہیں ہے۔ فیس بک پیج کے ڈیلیٹ ہونے کی اصل وجہ ابھی تک سامنے نہیں آسکی ہے کہ آخر کیوں اور کس وجہ سے ملت ٹائمز کا پیج اچانک ڈیلیٹ کردیاگیاہے۔ آئی ٹی ماہرین کے مطابق کسی بھی پیج کے خلاف رپوٹ ہونے کی بنیاد پر بھی ایسا ہوتاہے اور فیس بک پیج بغیر کسی نوٹس کے ڈیلیٹ کردیتاہے۔

ملت ٹائمز کے بانی ایڈیٹر شمس تبریز قاسمی نے میٹا کمپنی (فیس بک) سے پیج کو دوبارہ بحال کرنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہاکہ فیس بک نے ملت ٹائمز کا آفیشیل پیج اپنے یہاں سے ڈیلیٹ کردیاہے جس کے ایک ملین سے زیادہ فالوورز اور کروڑوں میں اس کے ناظرین تھے۔

فیس بک انڈیا سے اپیل ہے کہ وہ ہمارے پیج کو دوبارہ بحال کرے۔انہوں نے یہ بھی بتایاکہ فیس بک کمپنی سے رابطہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں اور دوبارہ بحال کرنے کے تعلق سے جو بھی اقدامات ہوسکتے ہیں اس پر عمل کیا جارہاہے۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button