قزاقستان میں بد امنی کے پیچھے بیرونی طاقتیں کارفرما: ایرلان قرین

قرین نے خبر 24 ٹی وی چینل سے کہا کہ قزاقستان میں ہم بیرونی حملوں کا سامنا کررہے ہیں جن کا مقصد بدامنی پھیلانا اوربغاوت کرنا ہے۔

نور سلطان: قزاقستان جمہوریہ کے ریاستی سکریٹری ایرلان قرین نے پیر کے روز کہا کہ ملک میں بدامنی پھیلانا بیرونی دہشت گردوں کی سازش تھی جس میں حکومت گرانے کے مقصد سےاندرونی اور بیرونی طاقتوں کا استعمال کیا گیا تھا ۔

قرین نے خبر 24 ٹی وی چینل سے کہا کہ قزاقستان میں ہم بیرونی حملوں کا سامنا کررہے ہیں جن کا مقصد بدامنی پھیلانا اوربغاوت کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گرد تنظیموں کے علاوہ اس میں اندرونی اور بیرونی قوتوں کی بھی سازش تھی، جس میں سائبر حملوں کا بھی استعمال کیا گیا تھا۔

ریاستی سکریٹری نے کہا کہ یہ صحیح نہیں ہوگا کہ ہم ان حملوں کا بیان ویلویٹ انقلاب کو انجام دینے کی ایک کوشش کے طور پر کریں کیونکہ کیونکہ ملک کے مخصوص حالات کے پیش نظر قزاخستان میں اس طرح کے حالات غیر موثر ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ صدر کے فیصلہ کن اقدام نے عدم استحکام کے منصوبوں کو ناکام بنا دیا، جس میں ایک اجتماعی سلامتی معاہدہ تنظیم کے دستے کو بلانا بھی شامل ہے۔”چونکہ صورتحال بہت سنگین تھی اس لیے سخت فیصلہ کرنے کی ضرورت تھی۔ سی ایس ٹی او اسکواڈ کی تعیناتی نے عدم استحکام لانے کے تمام منصوبوں کو ناکام بنا دیا۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button