مجھے پرینکاگاندھی سے 2کروڑ کی پینٹنگ خریدنے کیلئے مجبور کیاگیاتھا : رانا کپور

راناکپور فی الحال عدالتی تحویل میں ہے۔ ان کی گرفتاری مارچ2020ء میں ہوئی تھی۔ راناکپور نے کہا کہ مجھے پینٹنگ خریدنے کیلئے مجبور کیاگیاکہ جبکہ میں اس کیلئے سرے سے تیارہی نہیں تھا۔

ممبئی: یس بینک کے شریک بانی راناکپور نے انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ(ای ڈی) سے کہا ہے کہ انہیں کانگریس قائد پرینکا گاندھی وڈرا سے ایم ایف حسین کی ایک پینٹنگ خریدنے کیلئے ”مجبور“ کیاگیاتھا اور اس رقم کو گاندھی خاندان نے نیویارک میں سونیاگاندھی کے علاج پر خرچ کیا۔

تحقیقاتی ایجنسی نے ممبئی کی خصوصی عدالت میں جو چارج شیٹ داخل کی اس سے اس بات کا پتہ چلا ہے۔ رانا کپور نے ای ڈی سے یہ بھی کہا کہ انہیں اس وقت کے وزیرپٹرولیم مرلی دیوڑا نے کہاتھاکہ ایم ایف حسین کی پینٹنگ خریدنے سے انکار کرنے سے نہ صرف گاندھی خاندان سے ان کے روابط استوار نہیں ہوں گے بلکہ انہیں پدم بھوشن ایوارڈ بھی نہیں ملے گا۔

رانا کپور کا یہ بیان دوسری ضمنی چارج شیٹ (مجموعی طور پر تیسری چارج شیٹ) میں شامل ہے جو ای ڈی نے حال میں خصوصی عدالت میں یس بینک کے شریک بانی، ان کے ارکان خاندان، دیوان ہاؤزنگ فینانس لمیٹیڈ کے پروموٹرس کپل اور دھیرج وادھونس اور دیگر افراد کے خلاف منی لانڈرنگ کیس میں داخل کی۔

راناکپور نے بتایاکہ انہوں نے 2 کروڑ روپئے کا چیک دیاتھا۔ آنجہانی مرلی دیوڑا کے لڑکے ملنددیوڑا نے انہیں بعد میں رازداری سے بتایاکہ اس رقم کو گاندھی خاندان نے نیویارک میں سونیاگاندھی کے علاج پر خرچ کیا۔

سونیاگاندھی کے مددگار احمدپٹیل نے بھی ان سے کہاتھا کہ موزوں وقت پر سونیاگاندھی کے علاج میں مدد دے کر انہوں نے یعنی راناکپور نے گاندھی خاندان کا بھلا کیا ہے اور پدم بھوشن ایوارڈ کیلئے ان کے نام پر غورکیاجائے گا۔

بینکر راناکپور فی الحال عدالتی تحویل میں ہے۔ ان کی گرفتاری مارچ2020ء میں ہوئی تھی۔ راناکپور نے کہا کہ مجھے پینٹنگ خریدنے کیلئے مجبور کیاگیاکہ جبکہ میں اس کیلئے سرے سے تیارہی نہیں تھا۔

ملنددیوڑا کئی مرتبہ راناکپور کے بنگلہ اور دفترپر آئے تھے تاکہ انہیں پرینکا گاندھی وڈرا سے ایم ایف حسین کی پینٹنگ خریدنے کی ترغیب دے سکیں۔ ملنددیوڑا نے اس سلسلہ میں کئی فون کال کئے تھے اور مسیج بھی بھیجے تھے۔ یہ کالس اور مسیج مختلف موبائل نمبروں سے آئے تھے۔

تبصرہ کریں

Back to top button