محمد سراج کو بی سی سی آئی کے سالانہ کنٹراکٹ میں ترقی

۔ بی سی سی آئی کی جانب سے آج جاری کی گئی فہرست میں A+ میں کپتان روہت شرما، تیز گیند باز جسپریت بمراہ کے ساتھ ویراٹ کوہلی ٹاپ گریڈ میں موجود ہیں۔

نئی دہلی: بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) نے اپنے سالانہ معاہدے کا اعلان کردیا ہے۔ بی سی سی آئی کی جانب سے آج جاری کی گئی فہرست میں A+ میں کپتان روہت شرما، تیز گیند باز جسپریت بمراہ کے ساتھ ویراٹ کوہلی ٹاپ گریڈ میں موجود ہیں۔ ٹسٹ ٹیم سے ڈراپ کیے گئے چیتیشور پجارا اور اجنکیا رہانے کو نقصان ہوا ہے۔ بی سی سی آئی نے اس سال کے معاہدے کیلئے جملہ 28 کھلاڑیوں کا انتخاب کیا ہے۔

 آل انڈیا سینئر سلیکشن کمیٹی کی سفارش کی بنیاد پر بورڈ نے کھلاڑیوں کو برقرار رکھنے کی فہرست جاری کی ہے۔ تمام کھلاڑیوں کا یہ معاہدہ یکم اکتوبر 2021 سے ستمبر 2022 تک ہے۔ اے پلس گریڈ میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی جبکہ بی گریڈ میں 10 کھلاڑیوں کی تعداد نصف کرکے 5 کردی گئی ہے۔ گریڈ B میں اس سال تعداد 5 سے بڑھاکر 7 کردی گئی ہے۔ ساتھ ہی 10 کے بجائے 12 کھلاڑیوں کو سی گریڈ میں جگہ دی گئی ہے۔

اسپنر کلدیپ یادو اور فاسٹ بولر نودیپ سینی کے نام بی سی سی آئی کے جاری کردہ معاہدے سے خارج کر دیے گئے ہیں۔ محمد سراج کو ان کی بہتر کارکردگی کا صلہ سی گریڈ سے بی میں ترقی کی صورت میں ملا ہے۔ دھون، ہاردک پانڈیا اور ایشانت شرما کو اے گریڈ سے تنزلی کرکے سی گریڈ میں جبکہ بھونیشور کمار، امیش یادو، مینک اگروال اور ردھیمان ساہا کو بی سے تنزلی کرکے سی گریڈ میں کردیا گیاہے۔

گریڈ اے پلس میں ویراٹ کوہلی، روہت شرما، جسپریت بمراہ شامل ہیں جبکہ اے گریڈ میں آر اشون، رویندر جڈیجہ، کے ایل راہول، محمد سمیع اور ریشبھ پنت ہیں۔ گریڈ بی چیتیشور پجارا، اجنکیا رہانے، اکشر پٹیل، شردل ٹھاکر، شریاس ایئر، محمد سراج، ایشانت شرما کو جگی ملی ہے جبکہ گریڈ سی میں شکھر دھون، امیش یادو، بھونیشور کمار، ہاردک پانڈیا، واشنگٹن سندر، دیپک چاہر، شبمان گل، ہنوما ویہاری، یوزویندر چہل، سوریہ کمار یادو، ردھیمان ساہا، مینک اگروال شامل ہیں۔ اے پلس میں شامل کھلاڑیوں کو بی سی سی آئی کی جانب سے سالانہ 7 کروڑ روپے تنخواہ کے طورپر ملتے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی اے، بی اور سی گریڈ کے کھلاڑیوں کو پورے سال کی تنخواہ کے طورپر بالترتیب 5، 3 اور 1 کروڑ روپے دیے جاتے ہیں۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button