مخالف فلسطینی پالیسیوں کی عاجلانہ منسوخی پر زور: ریاض المالکی

مالکی نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کو بتایا کہ ڈونالڈ ٹرمپ انتظامیہ اور اسرائیلی وزیراعظم بنجامن نتن یاہو کی حکومت کے آخری دور میں امید تھی کہ اس صورتحال سے امن کے لئے تازہ پیشرفت کی راہ ہموار ہوگی۔

نیویارک: فلسطینی وزیر خارجہ ریاض مالکی نے امریکی صدر جوبائیڈن پر تنقید کی کہ وہ فلسطینیوں کے خلاف سابق صدر ڈونالڈ ٹرمپ انتظامیہ کی مخالفانہ پالیسیوں کو منسوخ کرنے بہت سست روی سے کام لے رہے ہیں اور اسرائیل کو دو ریاستی حل اور امن مذاکرات کے استرداد کو ترک کروانے واشنگٹن کے خصوصی تعلقات کو اسرائیل پر دباؤ ڈالنے استعمال نہیں کررہے ہیں۔

مالکی نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کو بتایا کہ ڈونالڈ ٹرمپ انتظامیہ اور اسرائیلی وزیراعظم بنجامن نتن یاہو کی حکومت کے آخری دور میں امید تھی کہ اس صورتحال سے امن کے لئے تازہ پیشرفت کی راہ ہموار ہوگی۔

انہوں نے بتایا کہ بائیڈن انتظامیہ نے ٹرمپ کی کئی غیرقانونی اور ناعاقبت اندیشانہ پالیسیوں کو منسوخ کیا ہے تاہم وہ سست روی سے کام لے رہا ہے۔

بالخصوص مشرقی یروشلم میں امریکی قونصل خانہ کی دوبارہ کشادگی کے لئے امریکی وعدہ کے سلسلہ میں سست روی کا مظاہرہ ہورہا ہے۔ مشرقی یروشلم میں امریکی قونصل خانہ کی دوبارہ کشادگی سے متنازعہ شہر میں فلسطینیوں کے لئے واشنگٹن کا کلیدی سفارتی مشن بحال ہوجائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ ہم نے دیکھا ہے کہ اسرائیل امریکہ کو کسی قدر اپنے موقف کی طرف راغب کررہا ہے اور یہی بات ہمارے لئے بہت تشویشناک ہے۔

مالکی نے بتایا کہ انہوں نے امریکی سفیر لنڈاتھامس گرین فیلڈ سے دیگر امور پر بہت ہی کھلا اور دوٹوک تبادلہ خیال کیا جس میں امریکہ۔ فلسطین تعلقات بھی شامل تھے۔

انہوں نے بتایا کہ فلسطینی امریکی کانگریس کی جانب سے واشنگٹن میں فلسطینی سفارتی مشن میں دوبارہ کشادگی پر عائد تحدیدات کو ختم کرنے امکانی راستوں کے بارے میں امریکی انتظامیہ سے بات چیت کررہے ہیں۔

اقوام متحدہ کے مشرقی وسطیٰ کے سفارتکار ٹاروینیسلینڈ نے قونصل کو بتایا کہ اسرائیلی سیکوریٹی فورسس نے 6 فلسطینیوں کو ہلاک کردیا جبکہ ایک اور فلسطینی کی موت کے حالات واضح نہیں ہیں۔

گذشتہ ماہ کے دوران مغربی کنارے پر 249 فلسطینی زخمی ہوئے تھے جن میں 45 بچے شامل ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ فلسطینیوں کے حملوں میں 15 اسرائیلی زخمی ہوئے۔

ذریعہ
منصف ویب ڈیسک

تبصرہ کریں

Back to top button