مختار انصاری کے فرزند  عباس انصاری کے خلاف ایف آئی آر

مختار انصاری کے فرزند نے ایک ریالی میں کہا میں نے ایس پی سربراہ اکھلیش یادو سے کہا تھا کہ کوئی بھی عہدیداروں کا تبادلہ یا تقرر 6ماہ تک نہ کیا جائے۔پہلے حساب کتاب ان تمام کالیا جائے۔جس کے بعد ہی ان کے تبادلوں کے صداقت ناموں پر مہر ثبت کی جائے۔

ماو(یوپی): اترپردیش پولیس نے ایک ایف آئی آر سرغنہ سے سیاستداں بن جانے والے مختار انصاری کے فرزند عباس انصاری کے خلاف درج کی ہے۔بتایاجاتاہے کہ اس نے مبینہ طورپر سرکاری عہدیداروں کو آدائیگی کے تعلق سے دھمکیاں دی تھیں جب ایک عوامی ریالی سے ضلع مؤ میں خطاب کر رہے تھے۔ عباس انصاری جو سہل دیو بھارتیہ سماج پارٹی(ایس بی ایس پی) سماج وادی پارٹی اتحاد کے اسمبلی انتخابات میں امیدوار ہیں۔

انہوں نے ریالی میں یہ کہا تھا کہ وہ ایس پی سربراہ اکھلیش یادو سے یہ بات پوچھ چکے ہیں کہ فی الحال عہدیداروں کے تبادلے اور تقررات تشکیل حکومت کے بعد نہ کریں جبکہ انہیں اس معاملہ میں ان کی یکسوئی نہ ہو۔میں نے ایس پی سربراہ اکھلیش یادو سے کہا تھا کہ کوئی بھی عہدیداروں کا تبادلہ یا تقرر 6ماہ تک نہ کیا جائے۔پہلے حساب کتاب ان تمام کالیا جائے۔جس کے بعد ہی ان کے تبادلوں کے صداقت ناموں پر مہر ثبت کی جائے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button