نواب ملک اور انیل دیشمکھ کو سپریم کورٹ سے بھی راحت نہیں

سپریم کورٹ نے پیر کے دن نواب ملک اور انیل دیشمکھ کو مہاراشٹرا قانون ساز کونسل الیکشن میں ووٹ ڈالنے جیل سے عارضی طورپر رہا کرنے سے انکار کردیا۔

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے پیر کے دن نیشنلسٹ کانگریس پارٹی(این سی پی) قائدین اور ارکان اسمبلی نواب ملک اور انیل دیشمکھ کو آج مہاراشٹرا قانون ساز کونسل الیکشن میں ووٹ ڈالنے جیل سے عارضی طورپر رہا کرنے سے انکار کردیا۔

جسٹس سی ٹی روی کمار اور جسٹس سدھانشو دھولیہ پر مشتمل ویکیشن بنچ نے تاہم اس بات پر آمادگی ظاہر کی کہ وہ عوامی نمائندگی قانون 1951 کی دفعہ 62(5) کی تشریح سے متعلق مسئلہ کا جائزہ لے گی۔

یہ دفعہ‘ جیل میں بند افراد کو ووٹنگ سے روکتی ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button