پاکستان سے بات چیت کے سوا کوئی راستہ نہیں: فاروق عبداللہ

انہوں نے کھلی جگہوں پر نماز کی ادائیگی کے خلاف چیف منسٹر ہریانہ منوہر لال کھٹر کے بیان پر اعتراض کیا اور کہا کہ کھٹر کو چاہئے کہ وہ مسلمانوں کوعبادت کے لئے جگہ فراہم کردیں کیونکہ دستور‘ مذہبی آزادی کی ضمانت دیتا ہے۔

جموں: صدر نیشنل کانفرنس فاروق عبداللہ نے ہفتہ کے دن کہا کہ جموں وکشمیر میں عسکریت پسندی کے خاتمہ کے لئے سوائے پاکستان سے بات چیت کے کوئی اور راستہ نہیں۔

انہوں نے کھلی جگہوں پر نماز کی ادائیگی کے خلاف چیف منسٹر ہریانہ منوہر لال کھٹر کے بیان پر اعتراض کیا اور کہا کہ کھٹر کو چاہئے کہ وہ مسلمانوں کوعبادت کے لئے جگہ فراہم کردیں کیونکہ دستور‘ مذہبی آزادی کی ضمانت دیتا ہے۔

یہ پوچھنے پر کہ آیا وہ پاکستان سے بات چیت پر اب بھی زور دیتے ہیں‘ فاروق عبداللہ نے کہا کہ آپ کو بات کرنی ہی ہوگی۔ چین سے بات چیت ہوسکتی ہے تو پھر پاکستان سے کیوں نہیں؟۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button