پاکستان میں الیکشن کروائیں یا انتشار کا سامنا کریں: عمران خان

عمران خان نے اپنے حامیوں سے کہا کہ وہ جلد پرامن تحریک کی کال دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ تحریک اسی وقت ختم ہوگی جب انتخابات کی نئی تاریخوں کا اعلان کیا جائے گا۔

اسلام آباد: پاکستان کے سابق وزیر اعظم عمران خان نے خبردار کیا ہے کہ انتخابات میں دھاندلی کی کوئی بھی کوشش ملک کو انتشار کی طرف دھکیل دے گی۔ پیر کو دی نیوز نے اپنی رپورٹ میں یہ اطلاع دی۔

خان نے یہ انتباہ اس وقت دیا جب پارٹی صدر کی کال پر پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے کارکنان اور حامی اتوار کی رات ملک کے تقریباً تمام بڑے شہروں میں سڑکوں پر نکل آئے۔ بنی گالہ سے ویڈیو لنک کے ذریعے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے اپنے حامیوں سے کہا کہ وہ جلد پرامن تحریک کی کال دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ تحریک اسی وقت ختم ہوگی جب انتخابات کی نئی تاریخوں کا اعلان کیا جائے گا۔

پارٹی نے پورے ملک میں اہم احتجاجی مقامات پر بڑی اسکرینیں لگائیں۔ اسلام آباد کے ایف نائن پارک، کراچی کے شاہراہ قائدین، لاہور کے لبرٹی چوک، فیصل آباد کے گھنٹہ گھر چوک، راولپنڈی کی کمرشل مارکیٹ، ملتان کے شاہ عبداللہ چوک اور پشاور کے ہشت نگری گیٹ پر بڑے احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔ ملک کے دیگر شہروں میں بھی مظاہرے ہوئے۔

پی ٹی آئی کے چیئرمین نے دعویٰ کیا کہ اگر موجودہ حکمرانوں کو اقتدار میں رہنے دیا گیا تو وہ تمام سرکاری اداروں کو تباہ کر دیں گے کیونکہ وہ پہلے ہی این اے بی اور ایف آئی اے کو ختم کر چکے ہیں۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ عام انتخابات آزادانہ اور غیرجانبدارانہ نہ ہوئے تو ملک کے حالات مزید خراب ہوں گے۔

یہ بھی پڑھیں

ساتھ ہی مسٹر خان نے افسوس کا اظہار کیا کہ حکمران جماعت نے پنجاب میں ضمنی انتخابات میں دھاندلی کے لیے الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کا سیاسی مخالفین کے خلاف کارروائی کے لیے پولیس کا استعمال کیا ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button