پاکستان میں زیارت گاہ کا دورہ کرنے 250 ہندوؤں کو دعوت

پاکستانی انگریزی اخبار روزنامہ ڈان کی رپورٹ کے مطابق یہ گروپس پرم ہنس جی مہاراج کی 'سمادھی' کے مقام کا دورہ کریں گے، وہ ایک سنت تھے، جو پاکستان میں ضلع کرک کے خیبر پختونخوا کے گاؤں تیری میں انتقال کر گئے تھے۔

اسلام آباد: پاکستان ہندو پریشد (پی ایچ سی) نے ملک میں مذہبی سیاحت اور یاترا کو فروغ دینے کے لیے 250 ہندوؤں کے ایک گروپ کو مدعو کیا ہے۔

پاکستانی انگریزی اخبار روزنامہ ڈان کی رپورٹ کے مطابق یہ گروپس پرم ہنس جی مہاراج کی ‘سمادھی’ کے مقام کا دورہ کریں گے، وہ ایک سنت تھے، جو پاکستان میں ضلع کرک کے خیبر پختونخوا کے گاؤں تیری میں انتقال کر گئے تھے۔

پی ایچ سی کے سرپرست رمیش کمار ونکوانی نے بتایا کہ ہندوستان، متحدہ عرب امارات اور امریکہ سے ہندو زائرین یکم جنوری کو ‘سمادھی’ کے مقام کی زیارت کے لیے پشاور پہنچیں گے۔

پی ایچ سی نے یہ تقریب پاکستان انٹرنیشنل فلائٹ سروس کے تعاون سے منعقد کی ہے۔مسٹر ونکوانی نے کہا کہ یہ دوسرا موقع ہے کہ کونسل نے دوسرے ممالک کے ہندو یاتریوں کو پاکستان میں ایک روادار اور تکثیری معاشرہ کے وجود کو دیکھنے مدعو کیا ہے۔

گزشتہ ماہ ہندوستان‘ کینیڈا‘ سنگاپور‘ آسٹریلیا اور اسپین سے 54 ہندوؤں نے پاکستان کا دورہ کیا، جن کی قیادت پرم ہنس جی مہاراج کے پانچویں جانشین شری ستگوروجی مہاراج نے کی تھی۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button