پاکستان میں پزا کی طرح گھر پر اے کے 47 کی ڈیلیوری

یہ ڈیلیوری سروس سارے پاکستان میں دستیاب ہے۔ یہ نیٹ ورک خفیہ طریقہ سے کام نہیں کررہا ہے۔ فیس بک پیجس اور واٹس ایپ گروپ میں ہتھیاروں کے کیٹلاگ لگے ہیں۔

نئی دہلی: پاکستان میں گھر پر ریوالور کی ڈیلیوری اتنی ہی آسان ہے جتنا کہ پزا منگوانا۔ سوشیل میڈیا پر کوئی بھی اپنی پسند کا ہتھیار منتخب کرسکتا ہے‘ ڈیلر کو فون کرکے مول تول کرسکتا ہے اور چند دن بعد مکان پر کورئیر آجائے گا۔

سماء ٹی وی نے یہ اطلاع دی۔ یہ ڈیلیوری سروس سارے پاکستان میں دستیاب ہے۔ یہ نیٹ ورک خفیہ طریقہ سے کام نہیں کررہا ہے۔ فیس بک پیجس اور واٹس ایپ گروپ میں ہتھیاروں کے کیٹلاگ لگے ہیں۔

اپنے گھر پر ہتھیار منگوانے والے ایک پاکستانی شہری نے سماء ٹی وی کو بتایا کہ اس کا اسلحہ خیبرپختونخواہ کے درہ آدم خیل سے کراچی آیا۔ اسے 38 ہزار روپے خرچ کرنے پڑے۔

نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر اس شخص نے بتایا کہ ڈیلیوری سے قبل اس سے لائسنس کے بارے میں نہیں پوچھا گیا۔ ساری معاملت فون پر طئے پائی۔ اس نے 10 ہزار روپے اڈوانس ایزی پیسہ کے ذریعہ بھیجے اور مابقی 28 ہزار روپے ہتھیار وصول ہونے کے بعد ادا کئے۔

سب سے سستی ڈیلیوری کراچی میں ہے۔ اس کے 2علیحدہ نیٹ ورک ہیں۔ پہلا نیٹ ورک ویپن ڈیلرس کا ہے اور دوسرا اُن کا ہے جو گھر پر پہنچاتے ہیں۔

ہتھیاروں کی کوئی قید نہیں۔ 9 ایم ایم پستول تا اے کے 47 سب کچھ برائے فروخت ہے۔ ہتھیاروں کا آن لائن آرڈر نہیں دیا جاسکتا لیکن پاکستان میں ایسا نہیں ہے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button