پوٹین جنگی مجرم‘ان کیخلاف عدالتی کاروائی ضروری:بائیڈن

بائیڈن نے کہاکہ ہمیں یوکرین کو ہتھیاروں کی فراہمی جاری رکھنا ہو گی جن کے ذریعے وہ لڑائی کا سلسلہ جاری رکھے سکے۔ ہمیں تمام معلومات حاصل کرنا ہوں گی یہاں تک یہ عدالتی کارروائی واقعتا جنگی جرائم سے متعلق بن جائے۔

واشنگٹن: یوکرین کے بوچا شہر میں روسی فوج پر شہریوں کی ہلاکت کے الزام پر امریکی صدر بائیڈن کا کہنا ہے کہ روسی صدر پیوٹن جنگی مجرم ہیں۔انھوں نے اس حوالے سے کہا کہ روس پر مزید پابندیاں لگائیں گے، انہوں نے مزید کہا کہ ہم روس کے خلاف جنگی جرائم کے مقدمہ کا مطالبہ کرتے ہیں۔

واضح رہے کہ یوکرینی شہر بوچا میں بڑے پیمانے پر شہری مارے گئے ہیں اور کہا جارہا ہے کہ اس میں روسی افواج ملوث ہیں، جبکہ روس نے اسکی تردید کرتے ہوئے بین الاقوامی جائزے کا مطالبہ کیا ہے۔بائیڈن نے پوتین کو "وحشی” قرار دیتے ہوئے کہا کہ "ان کا محاسبہ کیا جانا لازم ہے۔امریکی صدر نے پیر کے روز واشنگٹن میں صحافیوں سے گفتگو میں کہا کہ "ہمیں معلومات اکٹھا کرنا ہوں گی۔

 ہمیں یوکرین کو ہتھیاروں کی فراہمی جاری رکھنا ہو گی جن کے ذریعے وہ لڑائی کا سلسلہ جاری رکھے سکے۔ ہمیں تمام معلومات حاصل کرنا ہوں گی یہاں تک یہ عدالتی کارروائی واقعتا جنگی جرائم سے متعلق بن جائے۔بائیڈن نے باور کرایا کہ یوکرین میں روس کے فوجی آپریشن کے سبب امریکی انتظامیہ ماسکو پر مزید پابندیاں عائد کرے گی۔

دوسری جانب امریکی وزارت دفاع کے ایک اعلی سطح کے ذمے دار کا کہنا ہے کہ یوکرین کے قصبے بوچا میں سامنے آنے والے مناظر جنگی جرائم کا منظر پیش کر رہے ہیں۔ تاہم انہوں نے زور دے کر کہا کہ بوچا میں روسی افواج کے ہاتھوں جو کچھ ہوا،،، پینٹاگان کے پاس اس کی آزاد ذرائع سے تصدیق موصول نہیں ہوئی ہے۔

امریکی فوجی ذمے دار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ "روسی افواج نے یوکرین کے دارالحکومت کیف کے اطراف سے دو تہائی فوجی واپس بلا لی ہے۔ ان میں زیادہ تر کو بیلا روس میں تعینات کر دیا گیا ہے۔ روسی صدر کیف میں داخل ہونے اور یوکرین کی حکومت کے سقوط کا ہدف یقینی بنانے میں ناکام ہو چکے ہیں "۔

ذریعہ
ایجنسیز

تبصرہ کریں

Back to top button