کجریوال کی قیامگاہ پر توڑ پھوڑ کرنے والوں کو تہنیت

دہلی بی جے پی نے یووامورچہ کے 8 کارکنوں کو ”نوجوان انقلابی“ قرار دے کر ان کی ستائش کرتے ہوئے ان کی گلپوشی کی اور ضمانت پر رہائی پر ان کا خیر مقدم کیا۔

نئی دہلی: دہلی بی جے پی نے یووامورچہ کے 8 کارکنوں کو ”نوجوان انقلابی“ قرار دے کر ان کی ستائش کرتے ہوئے ان کی گلپوشی کی اور ضمانت پر رہائی پر ان کا خیر مقدم کیا۔

واضح رہے کہ چیف منسٹر دہلی اروندکجریوال کی قیامگاہ کے روبرو احتجاج کرنے اور توڑ پھوڑ میں ملوث ہونے پر ان کارکنوں کو 31 مارچ کوگرفتار کرلیا گیا تھا۔

دہلی بی جے پی کے صدر آدیش گپتا نے آج تصاویر کے ساتھ ٹویٹ کیا۔ بی جے پی یووامورچہ کے 8 کارکن جنہیں مخالف ہندوکجریوال کے خلاف احتجاج کرنے پر جیل بھیج دیا گیا تھا، 14 دن بعد عدالت نے انہیں ضمانت منظور کی ہے۔ ان نوجوان انقلابیوں کا آج ریاستی دفتر میں استقبال کیا گیا۔

ہمارا ہر کارکن مخالف ہندو فورسس کے خلاف لڑے گا۔ اس اقدام پر عام آدمی پارٹی نے فوری ردعمل ظاہر کیا اور کہا کہ اُس نے ملک بھر میں اپنے کارکنوں کو پیام دیا ہے اور اگر وہ غنڈہ گردی اور توڑ پھوڑ میں ملوث ہوں تو انہیں بھی تہنیت پیش کی جائے گی۔

عام آدمی پارٹی قائد آتشی نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ہائی کورٹ نے ملزمین کو کئی دن تک ضمانت نہیں دی جب انہیں ضمانت ملی تو بی جے پی نے ان غنڈوں کو تہنیت پیش کی۔

ملزمین جنہوں نے احتجاج منظم کیا اور چیف منسٹر کی قیامگاہ پر توڑ پھوڑ کی، ٹرائل عدالت میں درخواست ضمانت مسترد ہونے کے بعد ہائی کورٹ سے رجوع ہوئے تھے۔ بی جے پی ورکرس نے متنازعہ فلم ”دی کشمیر فائلس“ کے بارے میں اروندکجریوال کے تبصرہ کے خلاف احتجاج کیا۔ بی جے پی کجریوال سے معافی مانگنے کا مطالبہ کرتی رہی ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button