کشمیرمیں پولیس بس پردہشت گردوں کاحملہ

پولیس عہدیداروں نے بتایاکہ پنتھاچوک کے زیوان علاقہ میں آج دہشت گردوں نے بس پر فائرنگ کی۔ انہوں نے کہاکہ اس حملہ میں جموں وکشمیرآرمڈ پولیس کی 9ویں بٹالین کے کم از کم14ارکان زخمی ہوگئے۔

سری نگر۔: پارلیمنٹ پر حملہ کے 20 سال کی تکمیل کے موقع پرسری نگرکے مضافاتی علاقہ میں آج دہشت گردوں نے جموں وکشمیر آرمڈ پولیس ملازمین کی بس پرمہلک حملہ کیا۔جس کے نتیجہ میں دوپولیس ملازمین ہلاک اوردیگر12 زخمی ہوگئے۔

پولیس عہدیداروں نے بتایاکہ پنتھاچوک کے زیوان علاقہ میں آج دہشت گردوں نے بس پر فائرنگ کی۔ انہوں نے کہاکہ اس حملہ میں جموں وکشمیرآرمڈ پولیس کی 9ویں بٹالین کے کم از کم14ارکان زخمی ہوگئے۔

زخمیوں کومختلف ہاسپٹلس کومنتقل کیاگیا جہاں دوپولیس ملازمین زخموں کی تاب نہ لاکر چل بسے۔ مہلوکین میں آرمڈ پولیس کا ایک اسسٹنٹ سب انسپکٹر بھی شامل ہے۔ عہدیداروں نے بتایاکہ علاقہ کامحاصرہ کرلیاگیا ہے اور حملہ آوروں کا پتہ چلانے ایک مہم شروع کردی گئی ہے۔

کسی بھی دہشت گرد تنظیم نے ابھی تک پولیس بس پرفائرنگ کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔ جیش محمدکے دہشت گردوں نے20 سال پہلے آج ہی کے دن قومی دارالحکومت میں پارلیمنٹ کی عمارت پر حملہ کیاتھا۔

اس حملہ میں 9افراد ہلاک ہوئے تھے،بعدازاں تمام5دہشت گردوں کوہلاک کردیاگیا تھا۔نیشنل کانفرنس کے نائب صدرعمر عبداللہ، پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کی صدر محبوبہ مفتی اوردیگر جماعتوں نے بھی اس حملہ پر اظہارافسوس کیا۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button