کوہلی کے ٹسٹ ٹیم کی قیات سے بھی مستعفی ہونے کے امکانات

کوہلی ٹسٹ ٹیم کی کپتانی بھی چھوڑسکتے ہیں۔ ویراٹ کوہلی سال 2019 کے بعد سے انٹرنیشنل کرکٹ میں سنچری نہیں لگاسکے ہیں۔ ایسے میں خود پر سے دباو ہٹانے اور بیاٹنگ پر توجہ مرکوز کرنے کیلئے وہ ایسا کرسکتے ہیں۔

نئی دہلی: ویراٹ کوہلی کو ونڈے ٹیم کی کپتانی سے ہٹادیا گیاہے۔ ان کی جگہ روہت کو ٹیم انڈیا کا نیا کپتان بنایا گیا ہے۔ کوہلی نے ورک لوڈ منیجمنٹ کا حوالہ دیتے ہوئے ٹی۔20 ٹیم کی کپتانی ہی چھوڑ دی تھی، لیکن وہ ونڈے اور ٹسٹ کے کپتان بنے رہنا چاہتے تھے، لیکن بی سی سی آئی نے ان سے ونڈے ٹیم کی کپتانی چھین لی ہے۔ اب جبکہ ٹیم انڈیا کو راہول دراویڈ کے طورپر نیا کوچ مل گیاہے۔

 ایسے میں کوہلی ٹسٹ ٹیم کی کپتانی بھی چھوڑسکتے ہیں۔ ویراٹ کوہلی سال 2019 کے بعد سے انٹرنیشنل کرکٹ میں سنچری نہیں لگاسکے ہیں۔ ایسے میں خود پر سے دباو ہٹانے اور بیاٹنگ پر توجہ مرکوز کرنے کیلئے وہ ایسا کرسکتے ہیں۔ گزشتہ دنوں گھر میں ہوئی نیوزی لینڈ کے خلاف ٹسٹ سیریز کی 2 اننگوں میں بھی وہ کچچھ خاص نہیں کرسکے تھے۔ سابق کوچ روی شاستری کے ساتھ کوہلی کا اچھا تال میل تھا۔ ایسے میں نئے منیجمنٹ کے آتے ہی ویراٹ کوہلی 2 فارمیٹ کی کپتانی سے ہٹ چکے ہیں۔ یعنی ان کا قد گھٹاہے۔

 ایسے میں ان پر ٹسٹ میں بطور کپتان اچھی کارکردگی پیش کرنے کا دباو رہے گا۔ کورونا کے درمیان کوہلی ذہنی صحت اور ورک لوڈ منیجمنٹ کی بات کرتے رہے ہیں۔ لمبے وقت تک کھلاڑیوں کا بایو ببل میں رہنا آسان نہیں ہے۔ ایسے میں عالمی ٹسٹ چمپئن شپ کو دیکھتے ہوئے ٹیم کو مسلسل سیریز کھیلنی ہے۔ ایسے میں کوہلی کے ٹسٹ کی کپتانی چھوڑنے کے پیچھے یہ بھی بڑی وجہ ہوسکتی ہے۔

 کوہلی سے ونڈے ٹیم کی کپتانی چھینے جانے کا مطلب ہے کہ بی سی سی آئی نے انہیں واضح طورپر پیغام بھیج دیاہے۔ ایسے میں سلکرٹس سے لیکر بورڈ کے افسران تک کا بطور کپتان ان پر سے اعتماد کم ہوا ہے۔ اب وہ ٹسٹ ٹیم میں کسی کھلاڑی کے حق میں بات نہیں رکھ سکیں گے۔ روہت شرما کو ٹسٹ کا نائب کپتان بنایا جانا بھی اس طرف اشارہ کررہا ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button