یوپی میں آوارہ مویشیوں کا مسئلہ حل کرنے پرینکا گاندھی کا تیقن

پرینکا گاندھی نے سرکاری ملازمتوں میں خواتین کے لیے 40 فیصد تحفظات کو یقینی بنانے کانگریس کے وعدہ کو بھی دہرایا۔

امیٹھی (اترپردیش) سینئر کانگریس قائد پرینکا گاندھی وڈرا نے آج کہا کہ اگر اترپردیش میں ان کی پارٹی برسراقتدار آتی ہے تو وہ آوارہ مویشیوں کے مسئلہ سے نمٹنے گائے کا گوبر خریدنے حکومت چھتیس گڑھ کی اسکیم اختیار کرے گی ۔

وزیر اعظم نریندر مودی کی ایک حالیہ تقریر کا حوالہ دیتے ہوئے جس میں انہوں نے رائے دہندوں سے وعدہ کیا تھا کہ اترپردیش میں آوارہ مویشیوں کے مسئلہ سے نمٹنے 10 مارچ کے بعد ایک نئی پالیسی متعارف کرائی جائے گی ، پرینکا گاندھی نے کہا کہ انہیں خوشی ہے کہ کانگریس کی تجویز کی نقل کی گئی ہے ۔

پرینکا گاندھی نے یہاں جگدیش پور میں ایک جلسۂ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ چھتیس گڑھ حکومت نے اس مسئلہ کو حل کرنے کا راستہ دکھایا ہے ۔ اس نے عوام سے دو روپئے فی کیلو کی شرح سے گائے کا گوبر خریدنا شروع کیا تھا ۔ ابتداء میں لوگوں نے اس اسکیم کا مذاق اڑایا ، لیکن پھر آوارہ مویشیوں کا دھیان رکھنے لگے اور حکومت کو گائے کا گوبر فروخت کرنے لگے جس نے کھاد اور گوبر گیس وغیرہ بنانے کے لیے اسے سیلف ہیلپ گروپس کو فراہم کیا ہے ۔

اترپردیش میں اگر ہماری حکومت بنتی ہے تو ہم یہاں بھی یہ اسکیم شروع کریںگے ۔ یہی نہیں بلکہ آوارہ مویشیوں کی وجہ سے ہونے والے نقصانات کے لیے کسانوں کو 3 ہزار روپئے فی ایکڑ معاوضہ بھی دیا جائے گا ۔ پرینکا گاندھی نے سرکاری ملازمتوں میں خواتین کے لیے 40 فیصد تحفظات کو یقینی بنانے کانگریس کے وعدہ کو بھی دہرایا۔

تبصرہ کریں

Back to top button