یوپی کی جنگ، پیلی بھیت سے ورون گاندھی کی غیرحاضری نمایاں

بہرحال ان کے ایک قریبی ساتھی نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ہر شخص کو اپنا ووٹ دینے کی آزادی حاصل ہے، لیکن پیلی بھیت میں رائے دہندوں کی کثیر تعداد اسمبلی انتخابات کے موقع پر ورون گاندھی کی اپیل پر فیصلہ کرتی ہے۔ اس مرتبہ ان کی طرف سے کوئی پیام نہیں آیا ہے۔

پیلی بھیت : بی جے بی رکن پارلیمنٹ ورون گاندھی کے اپنے حلقہ پیلی بھیت سے غیرحاضری نے بی جے پی کے لیے عجیب صورتِ حال پیدا کردی ہے، جہاں چہارشنبہ کے روز رائے دہی ہونے والی ہے۔

پیلی بھیت میں پانچ اسمبلی حلقے ہیں اور سکھوں کی قابل لحاظ آبادی ہے۔ ورون اور ان کی والدہ منیکا کو اس حلقہ میں کافی تائید حاصل ہے۔ ان دونوں نے اس نشست پر بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کی ہے۔ منیکا کو 2014ء میں اور ورون کو 2019ء کے لوک سبھا انتخابات میں فی کس زائد از 5 لاکھ ووٹ ملے ہیں۔

بہرحال کسانوں کے احتجاج سے متعلق سوالات اٹھانے پر بی جے پی نے ان دونوں کو اسٹار کمپینرس کی فہرست سے خارج کردیا۔ ورون نے اپنی غیرحاضری کی وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ میں کووِڈ کے ڈیلٹا ویرینٹ کی وجہ سے متاثر تھا اور ابھی بھی پوری طرح ٹھیک نہیں ہوا ہوں۔ جیسے ہی میری صحت اجازت دیتی ہے میں اپنے حلقہ میں پہنچ جاؤں گا۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button