یوکرین میں بربریت،پوٹین جنگی مجرم:بائیڈن

امریکہ کے صدر جوبائیڈن نے روس کے ہم منصب ولادیمیر پوٹین کو جنگی مجرم قراردیا اور کہا کہ روس کی جانب سے یوکرین میں فوجی کاروائی جس کا آغاز تین ہفتے قبل ہواہے تاحال جاری ہے جس کی وجہ سے جانی ومالی نقصانات ہورہے ہیں۔

واشنگٹن/ماسکو: امریکہ کے صدر جوبائیڈن نے روس کے ہم منصب ولادیمیر پوٹین کو جنگی مجرم قراردیا اور کہا کہ روس کی جانب سے یوکرین میں فوجی کاروائی جس کا آغاز تین ہفتے قبل ہواہے تاحال جاری ہے جس کی وجہ سے جانی ومالی نقصانات ہورہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ملک کی صدر کے حیثیت سے پوٹین نے جو کاروائی کی ہے وہ ناقابل معافی اور قابل مذمت ہے۔انہوں نے پوٹین کے اقدامات کی شدید مذمت کی اور کہا کہ یوکرین میں مظالم کا سلسلہ جاری ہے۔

جنگی مجرموں کی جانب سے کی جارہی کاروائی کی بین الاقوامی اور امریکہ کی جانب سے تحقیقات کی جانی چاہئے۔وائٹ ہاؤس کی پریس سکریٹری جین ساکی نے صدر امریکہ کے موقف کی مدافعت کرتے ہوئے کہا کہ جوبائیڈن یوکرین میں ہورہی بر بریت اور تشدد کو دیکھتے ہوئے اپنے تاثرات کا اظہار کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ صدر امریکہ نے اپنے دلی تاثرات کا اظہار ٹیلی ویژن پر عوام کو مخاطب کرتے ہوئے کیا اور کہا کہ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی جانب سے جنگی جرائم کی تحقیقات کیلئے قانونی کاروائی کی جائے گی۔

ماسکو میں کریملن نے صدر امریکہ کی جانب سے جنگی مجرم کا ریمارکس کئے جانے کو ناقابل معافی اور مبالغہ آمیز قراردیا ہے اور کہا کہ صدر کی حیثیت سے جوبائیڈن کو یہ معلوم ہونا چاہئے کہ امریکہ کی دنیا بھر میں کاروائیوں کی وجہ ہزاروں افراد ہلاک ہوگئے ہیں اس لئے ان کا بیان قابل قبول نہیں ہوسکتا۔

کریملن کے ترجمان ڈی پیسکوف نے روسی خبررساں ادارہ کو یہ بات بتائی۔روس کا کہنا ہے کہ امریکہ کی جانب سے کئی ممالک میں بمباری اور فوجی کاروائی کی گئی اور اب وہ ہماری کاروائی میں مداخلت کرتے ہوئے اس طرح کا بیان دے رہے ہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button