یوکرین کے اسکول پر روس کی بمباری‘ 60 افراد کی ہلاکت کا خدشہ

یوکرین کے لوہانسک علاقہ میں ایک اسکول پر میزائل حملے میں کم از کم 60 افراد کی ہلاکت کا اندیشہ ہے۔ یہ اطلاع اتوار کو میڈیا رپورٹ میں سامنے آئی ہے۔

کیف: یوکرین کے لوہانسک علاقہ میں ایک اسکول پر میزائل حملے میں کم از کم 60 افراد کی ہلاکت کا اندیشہ ہے۔ یہ اطلاع اتوار کو میڈیا رپورٹ میں سامنے آئی ہے۔

ایک عہدیدار نے بتایا کہ ہفتہ کو ایک اسکول پر فضائی حملہ ہوا جہاں 90 افراد نے پناہ لی تھی۔لوہانسک ریجنل ملٹری ایڈمنسٹریشن کے سربراہ سرہی ہیڈے نے اتوار کو ٹیلی گرام پر بتایا کہ اسکول سے 30 افراد کو بچا لیا گیا ہے جن میں 7 زخمی بھی شامل ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ملبہ سے دو لاشیں بھی نکالی گئیں۔سی این این نے ہیڈے کے حوالے سے بتایا گیا کہ اس بات کا امکان ہے کہ اسکول کی عمارت کے ملبے تلے پھنسے تمام 60 افراد کی موت ہو گئی ہے۔سی این این کے مطابق روسی طیارے نے بلوہوریوکا گاؤں کے اسکول پر بمباری کی جس سے عمارت میں آگ لگ گئی۔

فائر فائٹرز کو آگ پر قابو پانے میں تقریباً چار گھنٹے لگے۔یوکرین: مشرقی یوکرین میں روسی طیاروں کی اندھا دھند بمباری کے بعد 60 سے 70 افراد کی ہلاکت کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے کیونکہ حملے کے بعد عمارت کو آگ لگ گئی اور اس کے بعد وہ زمین بوس ہوگئی تھی۔

لوہانسک کے گورنر سہرائی ہائیڈائی نے کہا ہے کہ لوگوں کی بڑی تعداد نے اسکول میں پناہ لے رکھی تھی۔ اب تک 30 شہریوں کو ملبے سے نکال لیا گیا ہے جبکہ دو افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہوگئی ہے۔ یہ اسکول بائیلورووہکا نامی دیہات میں واقع ہے جہاں لگ بھگ 90 افراد نے پناہ لے رکھی تھی۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارم ٹیلی گرام پر گورنر نے ایک پیغام میں کہا کہ ’زخمی ہونے والوں کی تعداد سات ہے، 30 افراد کو ملبے سے زندہ نکالا گیا ہے اور خدشہ ہے کہ شاید 60 افراد ملبے تلے دفن ہوکر ہلاک ہوچکے ہیں۔ انہوں نے دوبارہ ماسکو کو جنگی جرائم کا مرتکب ٹھہرایا۔

روس کے یوکرین پر حملے کو 10 ہفتوں سے زائد کا وقت گزرچکا ہے جس میں اب تک ہزاروں افراد بالخصوص عام شہری مارے گئے ہیں اور دسیوں لاکھوں یوکرینی اپنا ملک چھوڑنے پر مجبور ہوچکے ہیں۔ روسی فورسس نے ہفتے کی سہ پہر کو بلوگوریفکا نامی شہر میں ایک اسکول کی عمارت کو فضائی حملے کا نشانہ بنایا، جس میں 90 کے قریب افراد پناہ لیے ہوئے تھے۔

بمباری کے نتیجے میں عمارت میں آگ لگ گئی اور بعد ازاں وہ منہدم ہو گئی۔ اب تک دو افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہو چکی ہے مگر علاقائی گورنر سیرہی ہائیدائی نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ ملبے تلے دبے تقریباً ساٹھ افراد کے بچنے کا امکان نہیں ہے۔ ایمرجنسی سروسز نے تیس افراد کو نکال لیا جن میں سے سات زخمی بتائے جا رہے ہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button