سدارامیا کا مسلم علاقہ سے متعلق بیان ’جہادی ذہنیت‘ : بی جے پی

کانگریس کے سینئر لیڈر سدارامیا کا یہ سوال کہ مسلم علاقہ میں ساورکر کی تصویر کیوں لگائی گئی؟“ پر حکمراں بی جے پی نے شدید ردعمل ظاہر کیا جسے اس کے قائدین نے ”جہادی ذہنیت“ قرار دیا۔

بنگلورو: کانگریس کے سینئر لیڈر سدارامیا کا یہ سوال کہ مسلم علاقہ میں ساورکر کی تصویر کیوں لگائی گئی؟“ پر حکمراں بی جے پی نے شدید ردعمل ظاہر کیا جسے اس کے قائدین نے ”جہادی ذہنیت“ قرار دیا۔

بعض نے تو یہ سوال بھی کیا کہ کیا ان کے مطابق ایسے محلے پاکستان کا حصہ ہیں۔ ریاستی اسمبلی کے قائد اپوزیشن نے منگل کو شیوموگہ میں 15اگست کی فرقہ وارانہ کشیدگی کے لیے بی جے پی کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے مسلم اکثریتی علاقہ میں ساورکر کی تصویر لگانے کی ہندو اور بی جے پی کارکنوں کی کوششوں پر سوال اٹھائے تھے۔

سدارامیا نے کہا تھا کہ انہوں نے مسلم علاقہ میں ساورکر کی تصویر لگانے کی کوشش کی۔ وہ جو تصویر لگانا چاہیں لگائیں، کوئی مسئلہ نہیں۔ مگر مسلم علاقہ میں ایسا کیوں کرنا؟ اور انہوں نے ٹیپو سلطان کی تصویر کو نا کیوں کہا؟“۔

سدارامیا کو لتاڑتے ہوئے ایک سابق چیف منسٹر اور ریاستی بی جے پی قائدین نے ان پر مسلم خوشنودی کا الزام عائد کرتے ہوئے ان کو کانگریس سے خارج کرنے کا مطالبہ کیا۔ بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری سی ٹی روی نے کہا کہ مسلم علاقہ سے آپ کا کیا مطلب ہے؟

...رشتوں کا انتخاب
...اب اور بھی آسان

لڑکی ہو یا لڑکا، عقد اولیٰ ہو یا عقد ثانی
اب ختم ہوگی آپ کی تلاش اپنے ہمسفر کی

آج ہی مفت رجسٹر کریں اور فری سبسکرپشن حاصل کرکے منصف میٹریمونی کے تمام فیچرس سے استفادہ کریں۔

آج ہی مفت رجسٹر کریں اور منصف میٹریمونی کے تمام فیچرس سے استفادہ کریں۔

www.munsifmatrimony.com

تبصرہ کریں

Back to top button