حیدرآباد
ٹرینڈنگ

شوبھا یاترا میں بی جے پی امیدوار مادھوی لتا کی مسجد کے سامنے شرانگیزی (ویڈیو وائرل)

مادھوی لتا نے مسجد کو دیکھ کر اپنے دونوں ہاتھوں سے تیر کمان چلانے لگیں۔ جیسے ہی مادھوی لتا نے اس اشتعال انگیز کارنامہ انجام دیا تو یاترا میں شامل سنگھیوں نے جئے شری رام کے نعرے لگانے شروع کردیئے۔

حیدرآباد: چہارشنبہ کو رام نومی کے موقع پرحیدرآباد کے مختلف علاقوں میں زعفرانی تنظیموں نے شوبھا یاترا نکالی۔ اس موقع پر حیدرآباد لوک سبھا حلقہ کی بی جے پی امیدوار مادھوی لتا نے بھی شوبھا یاترا میں شرکت کی۔ یاترا کے دوران مادھوی لتا ایک اوپن گاڑی میں سوار دیکھی جاسکتی ہیں۔

متعلقہ خبریں
سٹی پولیس کے رویہ پر مادھوی لتا کی ناراضگی
حیدرآباد دونوں ریاستوں کا مشترکہ دارالحکومت نہیں رہا
مادھوی لتا کو وائی پلس زمرہ کی سیکوریٹی، بی جے پی میں ایک گرما گرم موضوع بحث
صدر ٹی پی سی سی کے عہدہ کیلئے کانگریس قائدین کی دوڑ دھوپ
تلنگانہ میں کانگریس کو 10 نشستیں ملیں گی، چیف منسٹر پرامید

مادھوی لتا کی یاترا جب بیگم بازار کے سدی عنبر کے پاس پہنچی تو مادھوی لتا کی اشتعال انگیزی جاگ اُٹھی۔ مادھوی لتا نے مسجد کو دیکھ کر اپنے دونوں ہاتھوں سے تیر کمان چلانے لگیں۔ جیسے ہی مادھوی لتا نے اس اشتعال انگیز کارنامہ انجام دیا تو یاترا میں شامل سنگھیوں نے جئے شری رام کے نعرے لگانے شروع کردیئے۔

مادھوی لتا کے اس شر انگیزی کا ویڈیو سوشل میڈیا پر کافی وائرل ہورہا ہے۔ بی جےپی امیدوار کی اس اوچھی حرکت پر صارفین بھی تنقید کررہے ہیں۔ واضح رہے کہ مادھوی لتا پبلک میں اپنا نام بنانے کیلئے ملعون راجہ سنگھ جیسے اشتعال انگیز نعرے اور اپنے منہ سے مسلمانوں کے خلاف زہر اُگلنا شروع کردیا ہے۔

a3w
a3w