دہلی

درخواست ِ ضمانت غلطی سے داخل کی گئی: آفتاب پونہ والا

بہرحال جب عدالت نے اس سے دریافت کیا کہ آیا درخواست ِ ضمانت کو زیرالتوا رکھا جانا چاہیے تو پونہ والا نے کہا کہ میں چاہتا ہوں کہ وکیل مجھ سے بات کریں اور پھر درخواست ِ ضمانت واپس لیں۔

نئی دہلی: شردھا والکر قتل کیس کے ملزم آفتاب امین پونہ والا نے آج ساکیت کی عدالت کو بتایا کہ اس نے وکالت نامہ پر دستخط کیے تھے، لیکن درخواست ِ ضمانت داخل کیے جانے کے بارے میں اسے کوئی اطلاع نہیں تھی۔ ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ اسے عدالت میں پیش کیا گیا تھا۔

 ایڈیشنل سیشن جج برندا کماری نے کہا کہ عدالت کو بذریعہئ ای میل پونہ والا سے ایک اطلاع ملی تھی کہ درخواست ِ ضمانت غلطی سے داخل کی گئی ہے۔ بہرحال جب عدالت نے اس سے دریافت کیا کہ آیا درخواست ِ ضمانت کو زیرالتوا رکھا جانا چاہیے تو پونہ والا نے کہا کہ میں چاہتا ہوں کہ وکیل مجھ سے بات کریں اور پھر درخواست ِ ضمانت واپس لیں۔

 اس معاملہ کی سماعت 22 دسمبر کو مقرر ہے۔ اس نے جمعہ کے روز درخواست ِ ضمانت داخل کی تھی۔ عدالت نے 9 دسمبر کو پونہ والا کی عدالتی تحویل میں 14 دنوں کی توسیع کی تھی۔ اسے 12 نومبر کو گرفتار کیا گیا تھا اور فی الحال وہ تہاڑ جیل میں ہے۔

a3w
a3w