مشرق وسطیٰ

امداد کے منتظر فلسطینیوں پر اسرائیلی گولہ باری، 19 شہید، اسرائیل نے کی تردید

غزہ شہر کے جنوب میں خوراک کی امداد کے منتظر فلسطینیوں کی بھیڑ پر اسرائیلی گولہ باری میں کم از کم 19 فلسطینی جاں بحق اور 23 دیگر زخمی ہوگئے۔ حماس نے ہفتہ کے روز کہا مگر اسرائیل نے اس دعوے کی تردید کی ہے۔

غزہ: غزہ شہر کے جنوب میں خوراک کی امداد کے منتظر فلسطینیوں کی بھیڑ پر اسرائیلی گولہ باری میں کم از کم 19 فلسطینی جاں بحق اور 23 دیگر زخمی ہوگئے۔ حماس نے ہفتہ کے روز کہا مگر اسرائیل نے اس دعوے کی تردید کی ہے۔

متعلقہ خبریں
نیتن یاہو نے کم وسائل میں بھی لڑنے کا اعلان کیا
غزہ: رفح کے اسکول میں پناہ لیے جوڑے نے شادی کرلی (ویڈیو)
غزہ کے عوام کا تاریخی صبر جس نے اسلام کا سر بلند کردیا: رہبر انقلاب اسلامی
اسرائیل کے تیار کردہ اشیاء کا استعمال نہ کریں: مشتاق ملک
غزہ میں پہلا روزہ، اسرائیل نے فلسطینیوں کو مسجد اقصیٰ میں داخل ہونے سے روک دیا

حماس نے ایک پریس بیان میں اعلان کیا ہے کہ اسرائیلی فورسز نے فلسطینیوں پر اس وقت حملہ کیا جب وہ زیتون کے پڑوس میں کویت راؤنڈ اباؤٹ پر امداد کا انتظار کررہے تھے۔

تاہم، اسرائیلی فوج نے اس کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ "ابتدائی نتائج سے معلوم ہوا ہے کہ وہاں کوئی فضائی حملہ نہیں ہوا اور نہ ہی لوگوں پر فورسز کی طرف سے فائرنگ کی گئی۔”

غزہ کی پٹی، جس میں تقریباً 23.5 لاکھ افراد آباد ہیں، 7 اکتوبر 2023 سے مسلسل اسرائیلی حملوں اور محاصرے کی وجہ سے شدید انسانی بحران سے دوچار ہے۔ بین الاقوامی اداروں نے ساحلی علاقے میں قحط کی وارننگ جاری کی ہے۔