دہلی

راہول ہندوستانی سیاست کے میر جعفر: سمبت پاترا

سمبت پاترا نے کہاکہ یہ بہت شرمناک ہے کہ راہول گاندھی نے ہندوستان میں اداروں، جمہوریت کے ستونوں کو 'ڈیپ اسٹیٹس' قرار دیا ہے۔ انہوں نے ہندوستانی میڈیا اور عدلیہ جیسے اداروں کو پاکستان کی آئی ایس آئی کے برابر قرار دیا۔

نئی دہلی: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے کانگریس لیڈر راہول گاندھی کے اس بیان پر ایک بار پھر حملہ کیا ہے کہ وہ آج کے میر جعفر ہیں۔ بی جے پی کے ترجمان سمبت پاترا نے منگل کو الزام لگایا جس طرح میر جعفر نے نواب بننے کے لیے ایسٹ انڈیا کمپنی کی مدد لی۔

متعلقہ خبریں
لیفٹیننٹ گورنر دہلی پر اروند کجریوال کا پلٹ وار
صدر ٹی پی سی سی کے عہدہ کیلئے کانگریس قائدین کی دوڑ دھوپ
15 فیصد مسلم ریزرویشن سے متعلق کانگریس پر جھوٹا الزام : پی چدمبرم
راہل نے خط لکھ کر مرمو سے اگنی ویر اسکیم میں مداخلت کرنے کا مطالبہ کیا
انڈیا بلاک حکومت، اگنی پتھ اسکیم برخاست کردے گی: راہول گاندھی

 اسی طرح راہول گاندھی اپنے شرمناک ایجنڈے کے تحت بیرونی ممالک سے مدد مانگ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ’’یہ کہنا مبالغہ آرائی نہیں ہو گا کہ راہل گاندھی آج ہندوستانی سیاست کے میر جعفر ہیں۔ تاریخ اپنے آپ کو دہراتی ہے۔ آج کے میر جعفر کو معافی مانگنی چاہیے۔

پاترا نے کہا، "یہ بہت شرمناک ہے کہ راہول گاندھی نے ہندوستان میں اداروں، جمہوریت کے ستونوں کو ‘ڈیپ اسٹیٹس’ قرار دیا ہے۔ انہوں نے ہندوستانی میڈیا اور عدلیہ جیسے اداروں کو پاکستان کی آئی ایس آئی کے برابر قرار دیا۔ انہوں نے الزام لگایا کہ راہول گاندھی نے اپنے ریمارکس کے ساتھ بیرونی ممالک کو جمہوریت کی حفاظت کے لیے ہندوستان آنے کی کھلی دعوت دی ہے۔

انہوں نے کہا، “منی شنکر ایر اور راہول گاندھی ایک ہی کام کر رہے ہیں۔ دونوں ہندوستان کو بدنام کر رہے ہیں۔ پارلیمانی مباحثوں میں راہل گاندھی کی شرکت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے، انہوں نے کہا، "بحث جمہوریت کی روح ہے لیکن راہول گاندھی نے 2019 سے صرف چھ بار حصہ لیا ہے۔ وہ بحث میں حصہ نہیں لے رہے ہیں۔”

گاندھی کے "بدقسمتی سے میں ایک ایم پی ہوں” جیسے ریمارکس پر پاترا نے کہا، "راہول گاندھی کو نہیں معلوم کہ کیا کہنا ہے۔ وہ صرف جے رام رمیش کی مدد سے بولتے ہیں جنہوں نے خود کہا تھا کہ بدقسمتی سے میں ایم پی ہوں۔

a3w
a3w