حیدرآباد

تلنگانہ: خواتین اور لڑکیوں کو ہراسانی،15دنوں میں 133 افرادپکڑے گئے

تلنگانہ کی رچہ کنڈہ پولیس خواتین اور لڑکیوں کو ہراساں کرنے والے افرادکے خلاف کارروائی کررہی ہے۔ متاثرین کی جانب سے شکایت موصول ہوتے ہی کارروائی کی جاتی ہے۔

حیدرآباد: تلنگانہ کی رچہ کنڈہ پولیس خواتین اور لڑکیوں کو ہراساں کرنے والے افرادکے خلاف کارروائی کررہی ہے۔ متاثرین کی جانب سے شکایت موصول ہوتے ہی کارروائی کی جاتی ہے۔

متعلقہ خبریں
ماہ صیام کا آغاز، مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اعلان
شاطر دھوکہ باز سائبر کرائم پولیس رچہ کنڈہ کی جال میں
41 برسوں کے بعد کسی وزیراعظم کا دورہ عادل آباد
تلنگانہ:ایم ایل سی کی نشست کے ضمنی انتخاب کی مہم کااختتام
تلنگانہ میں ٹی ایس کے بجائے ٹی جی استعمال کی ہدایت، احکام جاری

ا سکولوں، کالجوں، بس اسٹینڈس، ریلوے سٹیشنوں اور دیگر عوامی مقامات پر نظررکھی جارہی ہے اور خواتین و لڑکیوں کوہراساں کرنے والوں کو پکڑا جا رہا ہے۔

اگر ضروری ہو تو ڈیکائے آپریشن بھی کئے جارہے ہیں۔ پکڑے جانے والوں کے خلاف مقدمہ درج کر کے جیل بھیجا جا رہا ہے۔ رچہ کنڈہ پولیس کمشنریٹ کے تحت 15 دنوں میں پولیس نے 133 افرادپکڑے ہیں۔

پولیس نے کہا کہ لڑکیوں اورخواتین کو ہراساں کرنے کی 148 شکایات موصول ہوئی ہیں۔ ان میں 17 افراد کو فون کے ذریعہ ہراساں کیا گیا، 38 افراد کو سوشل میڈیا کے ذریعہ ہراساں کیا گیا اور 93 افراد کو براہ راست ہراساں کیا گیا۔

ان میں سے 11 کے خلاف فوجداری مقدمات درج کیے گئے ہیں جبکہ 92 افراد کے خلاف عام مقدمات درج کیے گئے ہیں۔ 40 عہدیداروں اور ماہرین کی موجودگی میں کونسلنگ کی گئی۔ رچہ کنڈہ کے پولیس کمشنر ترون جوشی نے مشورہ دیا کہ ہراسانی کی شکایت فوری طورپر پولیس سے کی جائے۔

a3w
a3w