حیدرآباد

حلقہ کھمم سے مجھے پارٹی امیدوار بنانے پر بھٹی وکرامارکہ کو اعتراض کیوں؟:ہنمنت راؤ

ہنمنت راؤ نے افسوس ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس پارٹی میں بی سی قائد کے ساتھ غیر منصفانہ سلوک کیا جارہا ہے۔ انہوں نے جاننا چاہا کہ کیا کانگریس کو بی سی طبقہ کے ووٹوں کی ضرورت نہیں ہے؟ کیا کانگریس کی نظر میں بی سی طبقات ووٹنگ مشن ہیں؟

 حیدرآباد: سینئر کانگریس قائد وی ہنمنت راؤ نے ڈپٹی چیف منسٹر بھٹی وکرامارکہ پر سنسنی خیز الزامات لگائے۔ انہوں نے کہا یہ بات ناقبل فہم ہے کہ بھٹی وکرامارکہ نے انہیں حلقہ لوک سبھا کھمم سے پارٹی امیدوار بنانے کی مخالفت کیوں کر رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں
ماہ صیام کا آغاز، مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اعلان
41 برسوں کے بعد کسی وزیراعظم کا دورہ عادل آباد
تلنگانہ:ایم ایل سی کی نشست کے ضمنی انتخاب کی مہم کااختتام
تلنگانہ میں ٹی ایس کے بجائے ٹی جی استعمال کی ہدایت، احکام جاری
تلنگانہ میں آئندہ 24 گھنٹے میں تیز ہوائیں چلنے کا امکان

 انہوں نے کہا بھٹی وکرامارکہ مجھے دھوکہ دے رہے ہیں۔ پتا نہیں بھٹی مجھے کیوں روکنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان سے، پہلے کھمم سے امیدوار بنانے کا وعدہ کیا گیا تھا مگر اب وہ اپنے وعدے سے مکر رہے ہیں ہنمنت راؤ نے کہا آج میری  وجہ سے ملو بھٹی پارٹی میں اس پوزیشن پر فائز ہیں۔ میں نے ہی بھٹی کو  ایم ایل سی بنایا تھا۔

 انہوں نے کہا میرے خاندان سے کوئی بھی سیاست میں نہیں ہے۔ میری سونیا گاندھی اور راہول گاندھی سے اپیل ہے کہ میرے ساتھ انصاف کریں۔ انہوں نے کہا ھمم کے قائدین  کہتے ہیں کہ میں مقامی نہیں ہوں۔ میرا ان قائدین سے سوال ہے کہ آیا رینوکا چودھری، نادینڈلا بھاسکر راو، رنگیا نائیڈو  مقامی ہیں؟

 ہنمنت راؤ نے بھٹی وکرامارکہ سے ان سوالات کا جواب دینے کی خواہش کی۔ انہوں نے کہا کہ انہیں انصاف ملنا چاہیے کیوں کہ میں نے  عہدوں کی توقع کیے بغیر پارٹی کے لیے کام کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر کھمم لوک سبھا سیٹ انہیں الاٹ کی جاتی ہے تو وہ یقینی طور پر کامیابی حاصل کریں گے۔

 انہوں نے افسوس ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس پارٹی میں بی سی قائد کے ساتھ غیر منصفانہ سلوک کیا جارہا ہے۔  انہوں نے جاننا چاہا کہ کیا کانگریس کو بی سی طبقہ کے ووٹوں کی ضرورت نہیں ہے؟ کیا کانگریس کی نظر میں  بی سی طبقات ووٹنگ مشن ہیں؟

انہوں نے کہا  راہول گاندھی بھارت جوڑو نیائے یاترا، ذات پات کی مردم شماری جیسی باتیں کرتے ہیں اور آج  مجھے انصاف کے لیے راہول گاندھی کی ضرورت ہے۔ میں نے پارٹی کے لیے بہت کام کیا ہے اور مرتے دم تک پارٹی کے ساتھ رہوں گا۔

 میرے مرنے کے بعد بھی پارٹی کا جھنڈا مجھ پر رہے گا۔ میں پارٹی نہیں بدلوں گا۔ میں نے پارٹی میں بہت سے لوگوں کی مدد کی ہے۔ میری عمر میرے لیے رکاوٹ نہیں ہے۔

اس عمر میں بھی دوڑ میں حصہ لے سکتا ہوں۔ انہوں نے کہا  اگر راہول گاندھی کھمم سے الیکشن لڑتے ہیں تو میں دستبردار ہو جاؤں گا۔ اگر راہول گاندھی نہیں آتے ہیں تو میں کھمم سے انتخاب لڑنے کے لئے پوری طرح اہل اور فٹ ہوں اور مجھے کھمم سے ٹکٹ دیا جانا چاہیے۔

a3w
a3w