مشرق وسطیٰ

امدادکے منتظرفلسطینیوں پرحملہ، حماس کی اسرائیل کے ساتھ مذاکرات روکنےکی دھمکی

حماس کا کہنا ہے کہ اسرائیل نے 146 دنوں سے جاری حملوں میں بھوکے، پیاسے نڈھال فلسطینیوں کی اجتماعی نسل کشی کی ہے۔ غزہ: اسرائیل کا امدادکے منتظر فلسطینیوں پر حملہ، 100 سے زائد افراد شہید، سیکڑوں زخمی

غزہ: غزہ میں امداد کے منتظر فلسطینیوں پر اسرائیلی حملے کے ردعمل میں حماس نے اسرائیل کے ساتھ تمام مذاکرات روکنےکی دھمکی دے دی۔ عرب میڈیا کے مطابق حماس کا کہنا ہےکہ مذاکرات نہتے اور لاچار فلسطینی قوم کے خون سے زیادہ اہم نہیں ہیں۔

متعلقہ خبریں
غزہ میں امداد تقسیم کرنے والے ٹرک پر پھر اسرائیلی بمباری
رفح پر اسرائیل کا فضائی حملہ، 18فلسطینی جاں بحق
غزہ میں امداد کے منتظرین پر اسرائیل کاحملہ، 70 افراد شہید
ہم فلسطینیوں کے ساتھ امن چاہتے ہیں۔ اسرائیلی عوام کا حکومت کے خلاف مظاہرہ
رفح پر اسرائیلی فضائی حملے، 28 فلسطینی جاں بحق

حماس کا کہنا ہے کہ اسرائیل نے 146 دنوں سے جاری حملوں میں بھوکے، پیاسے نڈھال فلسطینیوں کی اجتماعی نسل کشی کی ہے۔ غزہ: اسرائیل کا امدادکے منتظر فلسطینیوں پر حملہ، 100 سے زائد افراد شہید، سیکڑوں زخمی

ماس نے مطالبہ کیا ہےکہ عرب لیگ اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل فوری طور پر اجلاس بلائیں اور غزہ میں بڑے پیمانے پر قتل عام اور نسل کشی روکنے کے لیے کارروائی کریں۔ حماس کا کہنا ہے کہ عرب ممالک فلسطینیوں کے خلاف نسل کشی کے بارے میں خاموشی توڑیں اور غزہ میں خوراک اور طبی امداد پہنچانے کے لیے فوری طور پر متحرک ہوں۔

حماس نے مزید کہا ہے کہ اقوام متحدہ اور عالمی برادری فلسطینیوں کے بڑے پیمانے پر قتل کو روکنے کے لیے اپنی ذمہ داریاں پوری کریں۔

واضح رہے کہ اسرائیلی فوج نے غزہ کےجنوب مغربی علاقے میں الرشیداسٹریٹ پر موجود امداد کے منتظر نہتے فلسطینیوں پر جنگی ہیلی کاپٹروں سے فائرنگ کی جس کے باعث 104 فلسطینی شہید اور 750 کے قریب افراد زخمی ہوگئے۔