دیگر ممالک

برازیل نے احتجاجاً اسرائیل سے اپنا سفیر واپس بلالیا

اسرائیل نے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے برازیلی صدر لو لا دا سیلوا کو ناپسندیدہ شخصیت قرار دیتے ہوئے کہا کہ برازیلی صدر کے بیان واپس لینے تک انھیں اسرائیل میں خوش آمدید نہیں کہا جائے گا۔

برازیلیا: برازیل نے غزہ جنگ میں فلسطینیوں کی نسل کشی پر احتجاجاً اسرائیل سے اپنا سفیر واپس بلالیا۔ عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق برازیل کے صدر لو لا دا سیلوا نے غزہ میں اسرائیل کے کردار کو ہٹلر اور فلسطینیوں کی نسل کشی کو ہولاکاسٹ سے تشبیہ دی تھی جس پر دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی پیدا ہوگئی تھی۔

متعلقہ خبریں
چین نے طالبان کے سفیر کے کاغذات تقرر قبول کرلئے
اسماعیل ہنیہ کی معاہدے سے متعلق شراط
غزہ میں امداد کے منتظرین پر اسرائیل کاحملہ، 70 افراد شہید
ویڈیو: اسرائیل میں حکومت کے خلاف ہنگامے پھوٹ پڑے
غزہ میں پہلا روزہ، اسرائیل نے فلسطینیوں کو مسجد اقصیٰ میں داخل ہونے سے روک دیا

اس بیان پر اسرائیل نے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے برازیلی صدر لو لا دا سیلوا کو ناپسندیدہ شخصیت قرار دیتے ہوئے کہا کہ برازیلی صدر کے بیان واپس لینے تک انھیں اسرائیل میں خوش آمدید نہیں کہا جائے گا۔

برازیل نے غزہ میں فلسطینیوں کی نسل کشی اور صدر لو لا دا سیلوا کو ناپسندیدہ شخصیت قرار دینے پر برازیل نے اسرائیل سے اپنا سفیر واپس بلالیا اور برازیل میں اسرائیلی سفیر کو دفتر خارجہ طلب کرنے کا عندیہ بھی دیا۔

واضح رہے کہ 7 اکتوبر سے جاری غزہ پر اسرائیلی بمباری میں شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 28 ہزار سے زائد ہوگئی جب کہ 60 ہزار سے زائد زخمی ہیں جن میں نصف تعداد خواتین اور بچوں کی ہے۔