یوروپ

13 ممالک کے وزرائے خارجہ کا اسرائیل کو رفح سے متعلق انتباہ

13ممالک کے وزرائے خارجہ نے اسرائیل کو ایک مشترکہ خط بھیجتے ہوئے رفح پر بڑے پیمانے پر زمینی حملے کے خلاف خبردار کیا ہے۔

برلن: 13 ممالک کے وزرائے خارجہ نے اسرائیل کو ایک مشترکہ خط بھیجتے ہوئے رفح پر بڑے پیمانے پر زمینی حملے کے خلاف خبردار کیا ہے۔

متعلقہ خبریں
نیتن یاہو نے کم وسائل میں بھی لڑنے کا اعلان کیا
21 سابق ججوں کا چیف جسٹس چندر چوڑ کومکتوب
رفح پر حملہ ٹالنے 33یرغمالی رہا کرنا ہوگا: اسرائیل
پرائمری انتخابات، بائیڈن کو اسرائیل۔غزہ جنگ پر مخالفت کا سامنا
غزہ پر اسرائیلی بمباری میں 40 افراد شہید

جرمن اخبار کے مطابق اس خط پر جی7 ممالک کینیڈا، جرمنی، فرانس، اٹلی، جاپان اوربرطانیہ کے علاوہ آسٹریلیا، ڈنمارک، فن لینڈ، نیدرلینڈز، نیوزی لینڈ، جنوبی کوریا اور سویڈن نے بھی دستخط کیے ہیں۔

امریکہ نے خط پر دستخط نہیں کیے اور اپنے ہی اقدام پر اسرائیلی حکام سے ملاقات کی۔

خط میں 13 ممالک کے وزرائے خارجہ نے حماس کے خلاف اپنے دفاع کے لیے اسرائیل کے حق کی حمایت کا اعادہ کیا، رفح پر بڑے پیمانے پر فوجی حملے کے خلاف خبردار کیا اور اس بات پر زور دیا کہ اس کے فلسطینی شہریوں کے لیے تباہ کن نتائج برآمد ہوں گے۔

وزرائے خارجہ نے یہ بھی واضح کیا کہ اسرائیلی حکومت کو غزہ کی پٹی میں تباہ کن اور بگڑتے ہوئے انسانی بحران کے خاتمے کے لیے ہر ممکن کوشش کرنی چاہیے۔

وزراء نے مطالبہ کیا کہ اسرائیل فلسطینی شہریوں کو فوری ضرورت انسانی امداد پہنچانے کے لیے رفح بارڈر گیٹ سمیت تمام کراسنگ پوائنٹس کھول دے۔

a3w
a3w