مشرق وسطیٰ

غزہ: اسرائیلی حملے میں 13 افراد ہلاک

غزہ پٹی کے مرکز میں واقع نصرت پناہ گزین کیمپ پر اسرائیلی حملے میں تقریباً 13 خواتین اور بچے مارے گئے۔

غزہ: غزہ پٹی کے مرکز میں واقع نصرت پناہ گزین کیمپ پر اسرائیلی حملے میں تقریباً 13 خواتین اور بچے مارے گئے۔

متعلقہ خبریں
نیتن یاہو نے کم وسائل میں بھی لڑنے کا اعلان کیا
اسرائیل بین الاقوامی عدالتِ انصاف کے تمام فیصلوں پر جلد عمل درآمد کرے: ترکیہ
حماس کے سرکردہ کمانڈرس کو شہید کرنے آئی ڈی ایف کا دعویٰ
اسرائیل کے تیار کردہ اشیاء کا استعمال نہ کریں: مشتاق ملک
رفح پر اسرائیلی حملہ، خون کی ہولی کا باعث بن سکتا ہے: ڈبلیو ایچ او

الجزیرہ کے نشریاتی ادارے نے اتوار کو بتایا کہ 7 اکتوبر 2023 کو فلسطینی تحریک حماس نے غزہ سے اسرائیل کے خلاف بڑے پیمانے پر راکٹ حملہ کیا اور سرحد کی خلاف ورزی کی، جس میں 1200 افراد ہلاک اور 240 کے قریب اغوا ہوئے۔

اسرائیل نے جوابی حملے شروع کیے، غزہ پٹی کی مکمل ناکہ بندی کا حکم دیا، اور حماس کے جنگجوؤں کو ختم کرنے اور یرغمالیوں کو بچانے کے بیان کردہ ہدف کے ساتھ فلسطینی سرزمین پر زمینی دراندازی شروع کی۔

مقامی حکام نے بتایا کہ غزہ پٹی میں اب تک تقریباً 30,800 فلسطینی مارے جا چکے ہیں، جن میں زیادہ تر بچے اور خواتین ہیں۔

واضح رہے کہ 24 نومبر کو قطر نے اسرائیل اور حماس کے درمیان عارضی جنگ بندی اور کچھ قیدیوں اور یرغمالیوں کے تبادلے کے ساتھ ساتھ غزہ پٹی میں انسانی امداد کی تقسیم کے معاہدے کی ثالثی کی تھی۔

جنگ بندی میں کئی بار توسیع کی گئی اور یکم دسمبر کو یہ ختم ہوئی۔ حماس نے غزہ میں اب بھی 100 سے زائد یرغمال بنائے ہوئے ہیں۔

a3w
a3w