مہاراشٹرا

ہندوستان نے اسرائیل اور حماس جیسی لڑائی کبھی نہیں دیکھی: بھاگوت

ہندوازم تمام طبقات کا احترام کرتا ہے اور ہندوستان نے ایسی لڑائی کبھی نہیں دیکھی جن مسائل پر حماس اور اسرائیل کے درمیان جنگ ہورہی ہے۔

ناگپور: ہندوازم تمام طبقات کا احترام کرتا ہے اور ہندوستان نے ایسی لڑائی کبھی نہیں دیکھی جن مسائل پر حماس اور اسرائیل کے درمیان جنگ ہورہی ہے۔

متعلقہ خبریں
غزہ کے عوام کا تاریخی صبر جس نے اسلام کا سر بلند کردیا: رہبر انقلاب اسلامی
ہندوستان کو اسرائیل اور ایران کے درمیان بڑھتی دشمنی پر سخت تشویش
اسماعیل ہنیہ کی معاہدے سے متعلق شراط
رام مندر جدوجہد اور قربانیوں کا نتیجہ : موہن بھاگوت
ذات پات کے اختلافات دور کرنے خصوصی کوششیں ضروری: موہن بھاگوت

راشٹریہ سوئم سیوک (آر ایس ایس) سربراہ موہن بھاگوت نے ہفتہ کو یہ بات کہی۔ وہ یہاں ایک اسکول میں منعقدہ پروگرام میں اظہار خیال کررہے تھے جو چھتراپتی شیواجی کی تاجپوشی کی 350 سالہ تقریب کے سلسلہ میں منعقد ہوئی تھی۔

اس ملک میں ہر طبقہ مذہب اور تہذیب کے عقائد کا احترام کیا جاتا ہے۔ ہندوازم ہندوؤں کا ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ ہم دیگر تمام مذاہب کو مسترد کرتے ہیں۔

جب آپ ہندو کہتے ہیں ایسے میں یہ کہنے کی ضرورت نہیں کہ مسلمانوں کا بھی تحفظ کیا جائے گا اور صرف ہندو ہی یہ کرسکتے ہیں جبکہ دیگر نے ایسا نہیں کیا‘ بھاگوت نے یہ بات کہی‘ جہاں کہیں لڑائیاں چل رہی ہیں آپ نے یوکرین جنگ‘ حماس۔

اسرائیل لڑائی کے بارے میں سنا ہوگا اور ہمارے ملک میں ایسے مسائل پر کبھی جنگیں نہیں ہوئیں۔ شیواجی مہاراج کے دور میں اس قسم کی لڑائی ہوتی تھی لیکن ہم نے کبھی بھی اس مسئلہ پر لڑائیاں نہیں کی اس لئے کہ ہم ہندو ہیں۔ انہوں نے یہ بات سامعین سے کہی۔