تلنگانہ

آئی سی یو میں مریض کو چوہے کاٹنے کامعاملہ، ڈاکٹرس کی معطلی کیخلاف احتجاج

زیرعلاج مریض کو چوہے کے کاٹنے کے واقعہ کے بعد کاماریڈی سرکاری میڈیکل کالج اینڈ جنرل اسپتال کے دو سینئرڈاکٹرس کو معطل کرنے تلنگانہ حکومت کے فیصلہ کے خلاف ریاست بھر میں سرکاری ڈاکٹرس نے بڑے پیمانہ پر احتجاج کیا۔

حیدرآباد: اسپتال کے انتہائی نگہداشت والے شعبہ (آئی سی یو) میں زیرعلاج مریض کو چوہے کے کاٹنے کے واقعہ کے بعد کاماریڈی سرکاری میڈیکل کالج اینڈ جنرل اسپتال کے دو سینئرڈاکٹرس کو معطل کرنے تلنگانہ حکومت کے فیصلہ کے خلاف ریاست بھر میں سرکاری ڈاکٹرس نے بڑے پیمانہ پر احتجاج کیا۔

متعلقہ خبریں
لون ایپ کے ایجنٹس کی ہراسانی، ایک شخص نے خودکشی کرلی
شعبہ لائف سائنسس کیلئے50 ہزار گریجویٹس کو ہنر مند بنانے کا ہدف: سریدھر بابو
لوک سبھا الیکشن: ضابطہ اخلاق بہت جلد نافذ ہوگا: مرکزی وزیر کشن ریڈی
حیدرآباد میں نومولود لڑکا کچرا کنڈی میں دستیاب
ٹی ڈبلیو اے ٹی کا میجسٹک ہوٹل نامپلی میں اجلاس

آوٹ پیشنٹ کے اوقات میں چند منٹ کے لئے معمول کی ڈیوٹی کا بائیکاٹ کرتے ہوئے تلنگانہ ٹیچنگ گورنمنٹ ڈاکٹرس ایسوسی ایشن (ٹی ٹی جی ڈی اے) کے ارکان نے اس فیصلہ کو واپس لینے کے اپنے مطالبہ کا اعادہ کیا۔

انہوں نے سیاہ بیاچس لگاتے ہوئے ریاستی حکومت کے خلاف نعرے بازی بھی کی۔ٹی ٹی جی ڈی اے ارکان نے کہاکہ وہ چلو ڈی ایم ای پروگرام کا آغازکریں گے اور حکومت اپنے فیصلہ کو واپس نہیں لیتی ہے تو وہ ریاست گیراحتجاج کریں گے۔