تلنگانہ

ریونت ریڈی تلنگانہ کے اگلے وزیر اعلیٰ ہوں گے: ذرائع

30 نومبر کو ہونے والے اسمبلی انتخابات میں پارٹی کو زبردست جیت دلانے کا سہرا تلنگانہ کانگریس کے سربراہ ریونت ریڈی کو جاتا ہے، اور اس بات کی پوری امید ہے کہ ریاست کے اگلے وزیر اعلیٰ وہی ہوں گے۔

حیدرآباد: 30 نومبر کو ہونے والے اسمبلی انتخابات میں پارٹی کو زبردست جیت دلانے کا سہرا تلنگانہ کانگریس کے سربراہ ریونت ریڈی کو جاتا ہے، اور اس بات کی پوری امید ہے کہ ریاست کے اگلے وزیر اعلیٰ وہی ہوں گے۔

متعلقہ خبریں
لون ایپ کے ایجنٹس کی ہراسانی، ایک شخص نے خودکشی کرلی
شعبہ لائف سائنسس کیلئے50 ہزار گریجویٹس کو ہنر مند بنانے کا ہدف: سریدھر بابو
تلنگانہ کانگریس، 14 لوک سبھا حلقوں سے کامیاب ہوگی: اتم کمارریڈی
لوک سبھا الیکشن: ضابطہ اخلاق بہت جلد نافذ ہوگا: مرکزی وزیر کشن ریڈی
حیدرآباد میں نومولود لڑکا کچرا کنڈی میں دستیاب

ذرائع نے بتایا ہے کہ پارٹی سربراہ ملکارجن کھرگے کی قیادت میں کانگریس کی مرکزی قیادت نے یہ فیصلہ لیا ہے۔

کانگریس ریاست میں نئی حکومت کی حلف برداری میں تاخیر کرنے پر مجبور ہے۔ کیونکہ ایسا کہا جارہا ہے کہ کچھ سینئر قائدین نے ٹی پی سی سی کے صدر ریونت ریڈی کے بطور چیف منسٹر کے نام پر اعتراض کیا ہے۔

کرناٹک کے نائب وزیر اعلیٰ ڈی کے شیوکمار اور اے آئی سی سی کے دیگر مبصرین پیر کو گچی باولی کے ایک نجی ہوٹل میں ون آن ون میٹنگ میں لی گئی 64 ایم ایل اے کی آراء کی تفصیلات کے ساتھ دہلی پہنچ گئے ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ کچھ قانون سازوں نے سابق سی ایل پی لیڈر ملو بھٹی وکرمارکا، اتم کمار ریڈی اور سریدھر بابو کو ممکنہ سی ایم کے طور پر نامزد کیا ہے۔

تاہم، زیادہ تر ایم ایل ایز نے تلنگانہ کانگریس کے صدر ریونت ریڈی کے حق میں اپنی رائے دی ہے۔