دہلی

شیوکمار کے دہلی پہنچتے ہی کانگریس میں بڑی ہلچل

ہائی کمان کے حکم پر چیف منسٹر کے عہدہ کے دوسرے دعویدار سدارامیا کل ہی یہاں آئے تھے اور اعلیٰ لیڈروں کے ساتھ ساتھ پارٹی کے دیگر لیڈروں سے بھی بات کر رہے ہیں۔

نئی دہلی: کرناٹک کانگریس کے صدر اور چیف منسٹر کے عہدہ کے امیدوار ڈی کے شیوکمار کی منگل کو یہاں آمد کے ساتھ ہی چیف منسٹر کے انتخاب پر پارٹی میں ہلچل تیز ہو گئی۔

متعلقہ خبریں
سکندرآباد کنٹونمنٹ: ضمنی الیکشن کی تاریخ کا اعلان، امیدوار کا انتخاب تمام پارٹیوں کے لئے مسئلہ
چیف منسٹر ریونت ریڈی کا دورہ دہلی متوقع
شرمیلا کی ڈپٹی چیف منسٹر کرناٹک شیو اکمار سے ملاقات
کمیشن نے چامراج نگر سیٹ پر دیا دوبارہ پولنگ کا حکم
کرناٹک قانون ساز کونسل میں متنازعہ مندر ٹیکس بل کو شکست

کمار کو پارٹی قیادت نے پیر کو بات چیت کے لیے دہلی بلایا تھا لیکن وہ خرابی صحت کی وجہ سے نہیں آئے۔ ہائی کمان کے حکم پر چیف منسٹر کے عہدہ کے دوسرے دعویدار سدارامیا کل ہی یہاں آئے تھے اور اعلیٰ لیڈروں کے ساتھ ساتھ پارٹی کے دیگر لیڈروں سے بھی بات کر رہے ہیں۔

شیوکمار جیسے ہی دہلی پہنچے، کانگریس لیڈر راہول گاندھی اس مسئلہ پر بات چیت کرنے پارٹی صدر ملک ارجن کھڑگے کی رہائش گاہ پہنچے۔ سمجھا جاتا ہے کہ مسٹر شیوکمار دونوں لیڈروں کے ساتھ صدر کی رہائش گاہ پر بات چیت کریں گے۔

دہلی روانہ ہونے سے پہلے کرناٹک کانگریس کے صدر نے بنگلورو میں کہا کہ پارٹی کے سامنے چیلنج عام انتخابات میں کرناٹک سے 20 لوک سبھا سیٹیں جیتنا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ کرناٹک کانگریس متحد ہے اور پارٹی کو مضبوط کرنے کے لئے سب مل کر کام کریں گے۔

دریں اثناء کرناٹک کے سینئر لیڈر بی کے ہری پرساد نے کہا کہ لیجسلیچر پارٹی کے انتخابات کے سلسلے میں نومنتخب اراکین اسمبلی سے رائے لینے بنگلور گئی مرکزی مبصرین کی ٹیم نے اپنی رپورٹ ہائی کمان کو سونپ دی ہے اور اس کی بنیاد پر نئے سربراہ کا انتخاب کیا جائے گا۔ خیال رہے کہ کانگریس لیجسلیچر پارٹی نے اتوار کو پارٹی صدر کو نیا لیڈر منتخب کرنے کا اختیار دیا تھا۔