مشرق وسطیٰ

غزہ ہمارا ہے،ہم اسے واپس لیں گے: اسرائیلی کمانڈر

کمانڈر نے کہا کہ دو ہزار سال کی جلاوطنی کے بعد، ہم غزہ کی بندرگاہوں اور ساحلوں پر واپس آئے۔ ہمیں 20 سال پہلے یہاں سے نکال دیا گیا تھا۔ اس مشن کو ختم کرنے کا کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے۔ اسرائیل کا ہدف کبھی ختم نہیں ہوتا۔

تل ابیب:ایک اسرائیلی کمانڈر نے اپنی ویڈیو میں کہا ہے اسرائیل کا ہم سر بلند رکھتے ہیں۔،ہم اسرائیل کے لوگوں کے لیے ان کی سرزمین کے لیے لڑ رہے ہیں ،یہ ہماری سرزمین ہے۔ مبینہ طور پر ناکہ بندی شدہ غزہ کی پٹی کے شمال میں ساحلی علاقے میں لی گئی ایک تصویر اسرائیلی پریس میں شائع ہوئی تھی۔

متعلقہ خبریں
ہندوستان نے اسرائیل اور حماس جیسی لڑائی کبھی نہیں دیکھی: بھاگوت
حماس کے خلاف اسرائیل کی جنگ ’کھلی جارحیت‘: اُردنی وزیر خارجہ
شادی کی تقریب میں خاتون کی ہوائی فائرنگ، دلچسپ ویڈیو
سارا علی خان نے ورک آؤٹ کا ویڈیو شیئر کیا
لڑکی کا برہنہ ویڈیو تیار کرنے پر کوچنگ انسٹیٹیوٹ کے مالک کے خلاف کیس درج

فوٹیج میں اسرائیلی فوجی ساحل سمندر پر اسرائیلی پرچم لہراتے اور اپنا قومی ترانہ گاتے ہوئے نظر آ رہے ہیں۔ ترک میڈیا کے مطابق ویڈیو میں یونٹ کے کمانڈر نے عبرانی میں اپنی تقریر میں دعویٰ کیا ہے کہ غزہ کی فلسطینی سرزمین اسرائیل کی ہے ۔

کمانڈر نے کہا کہ دو ہزار سال کی جلاوطنی کے بعد، ہم غزہ کی بندرگاہوں اور ساحلوں پر واپس آئے۔ ہمیں 20 سال پہلے یہاں سے نکال دیا گیا تھا۔ اس مشن کو ختم کرنے کا کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے۔ اسرائیل کا ہدف کبھی ختم نہیں ہوتا۔

 ہمارا ہدف۔ اسرائیل کا ہدف اس کے 2 ہزار سال کا نقصان ہے ،ہم اس جنگ میں خود داخل ہوئے ہم اسے ہی ختم کر رہے ہیں۔ اسرائیل کا ہم سر بلند رکھتے ہیں۔،ہم اسرائیل کے لوگوں کے لیے ان کی سرزمین کے لیے لڑ رہے ہیں ،یہ ہماری سرزمین ہے۔

اسرائیل نے غزہ کی پٹی سے دستبرداری اختیار کی جس پر اس نے 1967 میں چھ روزہ جنگ میں 2005 میں قبضہ کیا تھا۔ فلسطینی انتخابات میں حماس کے جیتنے اور غزہ میں برسراقتدار آنے کے بعد اسرائیل نے 2006 میں غزہ کی پٹی کی ناکہ بندی کر دی۔