حیدرآباد

کے ٹی آر اور کے راجگوپال ریڈی میں دلچسپ نوک جھونک

تلنگانہ اسمبلی میں سابق وزیر کے ٹی آر اور کانگریس ایم ایل اے کومٹ ریڈی راجگوپال ریڈی کے درمیان دلچسپ نوک جھونک ہوئی۔

حیدرآباد: تلنگانہ اسمبلی میں سابق وزیر کے ٹی آر اور کانگریس ایم ایل اے کومٹ ریڈی راجگوپال ریڈی کے درمیان دلچسپ نوک جھونک ہوئی۔

متعلقہ خبریں
توہین آمیز ریمارکس پر کے سی آر کو نوٹس
سٹی پولیس کے رویہ پر مادھوی لتا کی ناراضگی
تکو گوڑہ سے جھوٹ کی تشہیر، بی آر ایس قائد کے ٹی آر کا الزام
میں بلیوں کونہیں بلکہ شیروں کونشانہ بناؤں گا۔چیف منسٹر کے تبصرہ کے بعد بی آر ایس کیڈرمیں ہلچل
امیٹھی سے میرے الیکشن لڑنے کا فیصلہ پارٹی کرے گی: راہول گاندھی

راجگوپال ریڈی کو دیکھ کر کے ٹی آر نے پوچھا جناب!آپ کو کابینہ میں کب شامل کیا جائے گا؟ جس پر راجگوپال ریڈی نے کہا کہ ہم پر بھی آپ ہی کی طرح خاندانی اثر پڑا ہے۔

کے ٹی آر نے جواب دیا کہ یہ خاندانی حکومت نہیں ہے اور اگر آپ اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کریں گے تو آپ کو خوب شہرت ملے گی اورآپ کی قسمت کھل جائے گی۔

پھر کے ٹی آر نے دریافت کیا کہ کیا آپ کی دختر کیرتی پارلیمنٹ انتخابات میں مقابلہ کر رہی ہیں؟یا فرزند سنکیرت الیکشن لڑینگے؟

اس سوال پر راجگوپال ریڈی یہ کہتے ہوئے وہاں سے چلے گئے کہ براہ کرم انہیں تنازعہ میں نہ گھسیٹیں۔

بعد ازاں راجگوپال ریڈی نے اسمبلی لابی میں میڈیا سے بات چیت کی۔ انہوں نے کہا کے سی آرہی‘ بی آر ایس ایم ایل ایز کو بی جے پی میں بھیج رہے ہیں۔

بی آر ایس اپنے ارکان کی حفاظت کے لئے ایسا کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ وزیر داخلہ بننا چاہتے ہیں تاکہ بی آر ایس کے قائدین کو جیل بھیجا جا سکے۔ راجگوپال ریڈی نے انکشاف کیا کہ وہ کے سی آر کو اقتدار سے ہٹانے کیلئے کانگریس میں آئے تھے۔