دہلی

لوک سبھا کی کارروائی غیر معینہ مدت تک ملتوی

برلا نے کہا کہ کانگریس کے گورو گوگوئی نے مانسون اجلاس کے دوران حکومت کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک پیش کی۔ اس پر 19 گھنٹے 59 منٹ تک بحث ہوئی۔

نئی دہلی: پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کی تکمیل کے ساتھ ہی لوک سبھا کی کارروائی جمعہ کو ملتوی کر دی گئی۔ ایوان کی کارروائی دو بار ملتوی ہونے کے بعد جب دوپہر 1.30 بجےاراکین پارلیمنٹ ایوان میں پہنچے تو اسپیکر اوم برلا نے کہا کہ 17 ویں لوک سبھا کا 12 واں اجلاس 20 جولائی سے 11 جولائی تک جاری رہا ۔

متعلقہ خبریں
مغربی مہاراشٹرا، مراٹھواڑہ اور کونکن کی 11 سیٹوں پر انتخابی مہم آج شام ختم
پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کا جولائی سے آغاز
سی آئی ایس ایف کا 3300 رکنی دستہ آج سے پارلیمنٹ سیکوریٹی سنبھال لے گا
سینئر بی جے پی قائد نندکشور یادو، بہار اسمبلی کے اسپیکر منتخب
مودی حکومت، دستور کے لئے خطرہ: راہول گاندھی

مانسون اجلاس کے دوران 17 نشستوں میں 44.15 گھنٹے کام کیا گیا، مانسون اجلاس میں ایوان میں 45 فیصد کام کاج ہوا۔

برلا نے کہا کہ کانگریس کے گورو گوگوئی نے مانسون اجلاس کے دوران حکومت کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک پیش کی۔ اس پر 19 گھنٹے 59 منٹ تک بحث ہوئی۔ 60 اراکین نے بحث میں حصہ لیا۔ تحریک مسترد کر دی گئی۔

اسپیکر نے کہا کہ اجلاس میں 20 بل پیش کئے گئے اور 22 بل منظور کئے گئے۔ 50 ستاروں والے سوالات کے جوابات دیے گئے۔ تمام 20 ستاروں والے سوالات کے جوابات 9 اگست کو زبانی طور پر دیے گئے۔ ایوان میں حکومت کی طرف سے پچاس بیانات دئیے گئے۔

برلا نے ایوان کی کارروائی میں تعاون کے لیے وزیر اعظم، تمام جماعتوں کے رہنماؤں اور اراکین پارلیمنٹ، میڈیا، سیکورٹی فورسز اور پارلیمانی عملے کا شکریہ ادا کیا۔