کھیل

پیر کا دن میرے بین الاقوامی کیریر کا آخری دن ہوگا:انگلش بولر اسٹورٹ براڈ

انگلینڈ کے فاسٹ بولر اسٹورٹ براڈ نے ٹسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا۔ وہ 37 سال کی عمر میں ٹسٹ کرکٹ کو الوداع کہہ رہے ہیں۔

لندن: انگلینڈ کے فاسٹ بولر اسٹورٹ براڈ نے ٹسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا۔ وہ 37 سال کی عمر میں ٹسٹ کرکٹ کو الوداع کہہ رہے ہیں۔

ایشز سیریز کا پانچواں اور آخری ٹسٹ کھیلنے والے براڈ نے اوول میں تیسرے دن کے کھیل کے بعد بتایاکہ وہ اپنا آخری ٹسٹ میچ کھیل رہے ہیں اور اس میچ کے اختتام کے ساتھ ہی ٹسٹ کرکٹ سے ریٹائر ہو جائیں گے۔ وہ ٹسٹ کرکٹ میں 600 وکٹیں لینے والے دوسرے تیز گیند باز اور مجموعی طورپر چوتھے بولر ہیں۔

لندن میں تیسرے دن کا کھیل ختم ہونے کے بعد براڈ نے کہاکہ کل یا پیر میرا کرکٹ کا آخری دن ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ یہ سب سے پر لطف اور دل لگی سیریز رہی ہے جس میں میں ٹیم کا حصہ رہا ہوں۔ انہوں نے مزید کہاکہ میں کچھ عرصے سے چند ہفتوں سے اس کے بارے میں سوچ رہا ہوں۔

انگلینڈ بمقابلہ آسٹریلیا ہمیشہ میرے لیے ایک اہم مقام رہا ہے۔ مجھے آسٹریلیا کے ساتھ مقابلے پسند ہیں۔ مجھے لگتاہے کہ میں میں چاہتا تھا کہ میری آخری بیٹنگ اور بولنگ ایشز میں ہو۔ میں نے کل رات اسٹوکی کو بتایا اور آج صبح چینج روم کو بتایا اور سچ پوچھیں تو یہ صرف صحیح وقت کی طرح محسوس ہوا اور میں نہیں چاہتا تھاکہ دوست یا ناٹنگھم شائر ٹیم کے ساتھی چیزیں دیکھیں۔

میں نے اس کے بارے میں بہت سوچا ہے اور کل رات آٹھ بجے تک میں 50/50 کا تھا لیکن جب میں اسٹوکس کے کمرے میں گیا اور اسے دیکھا تو مجھے بہت خوشی محسوس ہوئی کیونکہ میں نے جو کچھ حاصل کیاہے اس سے مطمئن ہوں۔ براڈ نے 167 ٹسٹ میاچس‘ 121 ونڈے اور 56 ٹی 20 انٹرنیشنل کھیلے ہیں جس میں انہوں نے 845 وکٹیں حاصل کی ہیں۔

براڈ نے انگلینڈ کیلئے 20 سال کی عمر میں اگست 2006 میں پاکستان کے خلاف ٹی ٹوئنٹی میچ میں ڈیبیو کیاتھا۔ اس کے علاوہ 2007 میں سری لنکا کے خلاف اپنا پہلا ٹسٹ میچ کھیلا۔ یوراج سنگھ نے اس سال کے شروع میں ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں اپنے اوور میں چھ چھکے لگائے تھے اور براڈ تمام غلط وجوہات کی بناء پر سرخیوں میں آئے تھے۔

تاہم اس کے بعد انہوں نے کئی ریکارڈ اپنے نام کرلیے۔ انہیں کرکٹ کے اب تک کے سب سے بڑے تیز گیند بازوں میں شمار کیا جائے گا جو ٹسٹ وکٹ لینے والوں کی ہمہ وقتی فہرست میں پانچویں نمبر پر ہے۔ ناٹنگھم شائر کے بولر نے بین الاقوامی کرکٹ میں اپنا نام روشن کیاہے جس میں 2010 کا ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ اور چار ایشز سیریز میں فتوحات شامل ہیں۔

ٹیم کے ساتھی جیمز اینڈرسن کے ساتھ براڈ ان دو تیز گیند بازوں میں سے ایک ہیں جنہوں نے اپنے ملک کیلئے 600 ٹسٹ وکٹیں حاصل کیں اور اس ہفتے اوول میں اپنے آخری میچ میں ایشز کی 150ویں وکٹ حاصل کی۔ 37 سالہ براڈ نے بھلے ہی ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا ہو لیکن انگلینڈ کے تجربہ کار فاسٹ بولر جیمس اینڈرسن فی الحال اس بارے میں نہیں سوچ رہے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ وہ پانچویں ایشز ٹسٹ کے بعد کرکٹ کو الوداع نہیں کہنا چاہتے کیونکہ وہ اس وقت اپنی ٹیم کو بہت کچھ دے سکتے ہیں۔ انگلینڈ کیلئے سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے اینڈرسن اتوار کو 41 برس کے ہو جائیں گے۔ انہوں نے اس ایشز سیریز میں صرف پانچ وکٹیں حاصل کی ہیں لیکن ان کا ماننا ہے کہ انہوں نے بری بولنگ نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ مجھے نہیں لگتاکہ میں نے بری بولنگ کی یا میری رفتار کم ہوئی ہے۔

مجھے اب بھی لگتاہے کہ میں اس ٹیم کو بہت کچھ دے سکتا ہوں۔ جہاں تک ریٹائرمنٹ کا تعلق ہے میں اسے جلد نہیں لینے جا رہا ہوں۔ میں اب بہت کچھ دے سکتا ہوں۔ آپ دعا کریں کہ بڑی سیریز میں برا مرحلہ نہ آئے لیکن یہ میرے ساتھ ہورہا ہے۔ میرے پاس ٹیم کیلئے کچھ کرنے کا ایک اور موقع ہے۔ ایشز سیریز کے بعد اب انگلینڈ کو جنوری میں ہندوستان میں کھیلنا ہے اور اینڈرسن پر امید ہیں کہ وہ اس وقت تک کھیلتے رہیں گے۔

a3w
a3w