مشرق وسطیٰ

غزہ کے الشفا ہاسپٹل میں آکسیجن نہ ملنے سے 39 نومولود دم توڑ گئے

اسرائیلی ٹینکوں نے تمام علاقے کی ناکہ بندی کررکھی ہے اور اسرائیلی فوج کا الزام ہے کہ الشفا میں حماس کا کمانڈ اینڈ کنٹرول مرکز قائم ہے، اسپتال کے مرکزی دروازے توڑے جاچکے ہیں۔

غزہ: غزہ کے سب سے بڑے الشفا اسپتال میں آکسیجن نہ ملنے سے 39 نومولود بچے انتقال کرگئے، اسرائیلی فورسز نے الشفا اسپتال کا محاصرہ کررکھا ہے۔

متعلقہ خبریں
ملگ میں پرچم کا پول برقی تاروں سے ٹکراگیا، 2ہلاک
نیتن یاہو نے کم وسائل میں بھی لڑنے کا اعلان کیا
اسرائیلی فورسس کی کارروائی، مزید 2 فلسطینی شہید
رفح پر اسرائیلی حملہ، خون کی ہولی کا باعث بن سکتا ہے: ڈبلیو ایچ او
اسرائیل رہائشیوں کو رفح سے غزہ کے جنوب مغربی ساحل پر المواسی منتقل کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے

تفصیلات کے مطابق فلسطینی وزیر صحت کی جانب سے بیان میں کہا گیا ہے کہ غزہ کے سب سے بڑے الشفا اسپتال میں بجلی منقطع ہونے سے آکسیجن اور ادویات کی کمی کا سامنا ہے۔

غیرملکی میڈیا نے بتایا ہے کہ غزہ کےالشفا اسپتال میں آکسیجن اور ادویات کی کمی آکسیجن نہ ملنے سے 39 نومولود دم توڑ گئے ہیں۔ اسرائیلی فورسز نے غزہ کے سب سے بڑے الشفا اسپتال کا محاصرہ کرلیا ہے، اسپتال کے پانچ سو میٹر کے دائرے میں حماس اور اسرائیلی فورسز میں شدید جھڑہیں ہورہی ہیں۔

اسرائیلی ٹینکوں نے تمام علاقے کی ناکہ بندی کررکھی ہے اور اسرائیلی فوج کا الزام ہے کہ الشفا میں حماس کا کمانڈ اینڈ کنٹرول مرکز قائم ہے، اسپتال کے مرکزی دروازے توڑے جاچکے ہیں۔ بین الاقوامی میڈیا کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج کسی بھی وقت الشفا اسپتال میں داخل ہوسکتی ہے، الشفا اسپتال میں تیس ہزار سے زائد فلسطینیوں نے پناہ لے رکھی ہے۔

دوسری جانب ڈائریکٹرالشفااسپتال نے بیان میں کہا ہے کہ ہماری موت چند منٹ دور ہے، اس دنیا میں اگر کوئی با ضمیرہےتو اس جنگ کو روکے، ہم بے بس ہیں،مریضوں کا علاج کیسےکریں ؟ یہاں نہ پانی اورنہ بجلی ،مسلسل بمباری ہورہی ہے، اسپتال مریضوں سےبھر گیا ہے۔

اسپتال کے ڈاکٹرز نے اس عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آخری سانس تک مریضوں کا علان کرینگے اور اپنی زمین،لوگوں کو نہیں چھوڑیں گے، الشفااسپتال میں مریضوں کیساتھ نومولود بچوں کی بڑی تعداد موجود ہے۔

a3w
a3w