جموں و کشمیر
ٹرینڈنگ

کشمیر میں طالبہ کا حجاب پھاڑنے پر ٹیچر کے خلاف کیس درج

لڑکی نے کہا کہ یہ ٹیچر اسے اور اس کی سہیلیوں کو کچھ عرصہ سے ہراساں کررہا تھا لیکن آج اس نے جبراً اس کا حجاب نکال دیا۔ طالبہ کا کہنا ہے کہ وہ سابق میں اپنے ماں باپ کو یہ بات بتاچکی ہے

سری نگر: جموں وکشمیر کے ضلع باندی پورہ میں منگل کے دن ایک ٹیچر کے خلاف ایک طالبہ کا حجاب پھاڑدینے کے الزام میں کیس درج کیا گیا۔ سرکاری ذرائع کے بموجب لڑکی نے پولیس میں شکایت درج کرائی کہ وہ کلاس روم میں بیٹھی ہوئی تھی کہ ٹیچر اس کے قریب آیا اور اس نے جبراً اس کا حجاب نکال کر پھاڑدیا۔

متعلقہ خبریں
ایران میں خاتون کو 74 کوڑے مارنے کی سزا پر عمل درآمد
جموں و کشمیر میں اسمبلی الیکشن کب ہوگا، کانگریس کا سوال
انٹر سال دوم کے انگلش مضمون کا امتحان، 14ہزار طلبہ غیر حاضر
ذہنی دباؤ کے شکار طلبہ کو کونسلنگ کی سہولت، بورڈ آف انٹرمیڈیٹ کا ٹول فری نمبر جاری
طلباء سے ٹوائلٹ صاف کروانے پر صدرمعلمہ کے خلاف ایف آئی آر

 لڑکی نے کہا کہ یہ ٹیچر اسے اور اس کی سہیلیوں کو کچھ عرصہ سے ہراساں کررہا تھا لیکن اس نے جبراً اس کا حجاب نکال دیا۔ طالبہ کا کہنا ہے کہ وہ سابق میں اپنے ماں باپ کو یہ بات بتاچکی ہے۔ ایک مرتبہ اس کی ماں اسکول آئی تھی۔

ملزم ٹیچر نے اس کی ماں سے بحث تکرار کی اور کہا کہ وہ اسکول کیوں آئی ہیں۔ لڑکی کا کہنا ہے کہ اس نے اسکول پرنسپل اور دیگر ارکان ِ عملہ سے کئی مرتبہ شکایت کی لیکن کوئی کارروائی نہیں ہوئی۔ ٹیچر کے خلاف باندی پورہ پولیس اسٹیشن میں آئی پی سی 354  اور پوکسو ایکٹ 9/10 کے تحت کیس درج ہوا۔

a3w
a3w