ایشیاء

آرمی چیف میرے ساتھ دشمن جیسا سلوک کر رہے ہیں: عمران خان

عمران خان نے کہاکہ اگر آرمی چیف کو ان کی دیانتداری پر اتنا ہی شک ہے تو انہیں ذاتی طور پر اس کی انکوائری کرنی چاہیے اوروہ پائیں گے کہ درحقیقت میں کسی بھی بدعنوانی کے لئے بے قصور ہوں۔

لاہور: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے صدر اور سابق وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ آرمی چیف عاصم منیر ان کے ساتھ دشمن جیسا سلوک کر رہے ہیں۔ یہاں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے خان نے کہا، ‘اقتدار کو یہ سمجھ میں نہیں آتا کہ سیاست کیا ہے۔

متعلقہ خبریں
فوجی سربراہ جنرل پانڈے کا دورہ ازبکستان شروع
عمران خان، سیاسی مفاہمت میں بڑی رکاوٹ : نواز شریف
عدت نکاح کیس: عمران خان، بشریٰ بی بی کی سزا کےخلاف اپیلوں پر فیصلہ محفوظ
بشریٰ بی بی کو قید تنہائی میں رکھ کر ان کی سزا کو مزید سخت بنایا گیا: ہائیکورٹ
امریکہ کا عمران خان اور دیگر قیدیوں کی حفاظت پر اظہارِ تشویش

 ان کی اقتدار سے کوئی لڑائی نہیں ہے اور وہ ملک کی بہتری کے لیے اقتدار سے بات کرنے کو تیار ہیں لیکن اگر کوئی یہ سمجھتا ہے کہ میں اس کے سامنے گھٹنے ٹیک دوں گا تو ایسا نہیں ہو سکتا۔ اگر کوئی بات کرنے میں دلچسپی نہیں رکھتا ہے تو میں اس میں مدد نہیں کر سکتا۔”

اپنے خلاف بدعنوانی کے معاملات پر انہوں نے کہا، ’’میری اہلیہ اورمیرے خلاف بدعنوانی کے معاملات ثابت نہیں ہو سکتے۔ اگر آرمی چیف کو ان کی دیانتداری پر اتنا ہی شک ہے تو انہیں ذاتی طور پر اس کی انکوائری کرنی چاہیے اوروہ پائیں گے کہ درحقیقت میں کسی بھی بدعنوانی کے لئے بے قصور ہوں۔

سابق وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ ملک کی فوج کا مضبوط ہونا بہت ضروری ہے۔ انہوں نے جنرل (ریٹائرڈ) قمر جاوید باجوہ پر ان کی پیٹھ میں چھرا گھونپنے کا الزام لگایا اور کہا کہ سابق آرمی چیف کا کورٹ مارشل ہونا چاہیے۔

آئندہ عام انتخابات کے تناظر میں انہوں نے کہا، ’’ہم پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) امپائروں کے باوجود انتخابات جیتیں گے۔’ انہوں نے دعویٰ کیا کہ مہاجرپاکستانی ان کی پارٹی کے ساتھ کھڑے ہیں اور اس کی حمایت جاری رکھیں گے۔

a3w
a3w