دہلی

کانگریس ایک ملک، ایک الیکشن کی شدید مخالف

کانگریس نے ملک میں بہ یک وقت انتخابات کی مخالفت کی ہے۔ اس نے کہا ہے کہ یہ وفاقیت کی ضمانتوں اور دستور کے بنیادی ڈھانچہ کے خلاف ہے۔

نئی دہلی: کانگریس نے ملک میں بہ یک وقت انتخابات کی مخالفت کی ہے۔ اس نے کہا ہے کہ یہ وفاقیت کی ضمانتوں اور دستور کے بنیادی ڈھانچہ کے خلاف ہے۔

متعلقہ خبریں
10سال سے ملک کی آواز ہم نے نہیں آپ نے سلب کر رکھی تھی، مودی پر کانگریس کا پلٹ وار
حکومت NEET امتحان میں دھاندلی کی جامع تحقیقات کرے: کھڑگے-پرینکا
ایک ملک ایک الیکشن، سبھی جماعتوں سے مشاورت کی جائے گی: غلام نبی آزاد
ایک ملک ایک الیکشن کمیٹی کی 23 ستمبر کو میٹنگ
منی پور کا مسئلہ پارلیمنٹ میں پوری طاقت سے اٹھایا جائے گا: راہول گاندھی

کانگریس صدر ملیکارجن کھرگے کی پارٹی نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ یہ خیال ترک کردیا جائے اور اس کے لئے بنی کمیٹی تحلیل کردی جائے۔

وَن نیشن وَن الیکشن کمیٹی کے سکریٹری کے نام مکتوب میں انہوں نے سابق صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند سے جو کمیٹی کے سربراہ ہیں‘ گزارش کی کہ وہ اپنی شخصیت اور سابق صدرجمہوریہ کے عہدہ کا مرکزی حکومت کے ہاتھوں ”بے جا استعمال“ ہونے نہ دیں جو دستور اور پارلیمانی جمہورتی کی نفی کرنا چاہتی ہے۔

ملیکارجن کھرگے نے سکریٹری نتن چندرا کو لکھا کہ کانگریس وَن نیشن وَن الیکشن کے خیال کی سختی سے مخالفت کرتی ہے۔ یہ خیال ترک کردیا جائے اور کمیٹی تحلیل کردی جائے۔

a3w
a3w