مشرق وسطیٰ

ترکی میں زندہ نکالے جانے والوں کی تعداد9ہو گئی

ترکی میں تباہ کن زلزلے کے کئی روز گذرجانے کے بعد بھی ریسکیو آپریشن جاری ہے۔ریسکیو آپریشن میں اب بھی تباہ شدہ عمارتوں کے ملبے کے اندر سے اکا دکا زندہ افراد کو نکالا جا رہا ہے۔

انقرہ: ترکی میں تباہ کن زلزلے کے کئی روز گذرجانے کے بعد بھی ریسکیو آپریشن جاری ہے۔ریسکیو آپریشن میں اب بھی تباہ شدہ عمارتوں کے ملبے کے اندر سے اکا دکا زندہ افراد کو نکالا جا رہا ہے۔

متعلقہ خبریں
مشرقی انڈونیشیا میں 6.4 شدت کا زلزلہ
استنبول میں ایک اور زلزلہ کا امکان: ماہرین
ترکیہ اور شام زلزلے میں اموات کی تعداد 41 ہزار ہوگئی
ہندوستانی شہریوں نے ترکیہ کے لئے مدد روانہ کی
زلزلہ متاثرین سے لوٹ مار اور دھوکہ دینے والے48 افراد گرفتار

کل منگل کے روز امدادی ٹیموں نے جنوبی ترکی کے شہر انطاکیہ سے زلزلے کے 208 گھنٹے بعد ایک 65 سالہ شخص کو زنادہ نکالا جب کہ کل منگل کو ایک دوسری جگہ سے ایک لڑکی کو ملبے کے اندر سے زندہ حالت میں نکالا تھا۔

ہنگامی امدادی کارکنوں نے کہا کہ انہیں امید ہے کہ خاندان کے مزید افراد کو جلد ہی بچایا جائے گا۔ خبر رساں ادارے رائیٹرز کے مطابق اس ریسکیو آپریشن سے آج ملبے سے زندہ نکالے جانے والوں کی تعداد 9 ہو گئی ہے۔اس سے قبل ترکیہ کے شہر ادی یمان میں زلزلے کے 207 گھنٹے بعد ایک بچے کو ملبے کے نیچے سے نکالا گیا تھا۔

ترکیہ کے صوبہ کہرمان مرعش میں ایک شخص کو ملبہ تلے 206 گھنٹے گذارنے کے بعد بچا لیا گیا۔امدادی کارکن مونا دعبول نامی ایک غیر ملکی خاتون کو بھی نکالنے میں کامیاب ہو گئے جو کہ 204 گھنٹے بعد جنوبی ترکیہ کے علاقے ہاتے میں زلزلے سے تباہ ہونے والی عمارت کے ملبے تلے دبی تھی۔

انطاکیہ شہر میں واقع عمارت کے ملبہ کے نیچے سے نکالے جانے کے بعد اسے ہسپتال لے جایا گیا۔منگل کے روز تلاش اور امدادی ٹیموں نے ملک کے جنوب میں آنے والے زلزلہ کے 201 گھنٹے بعد ہاتے ریاست میں ایک نوجوان خاتون کو ملبہ کے نیچے سے نکالا۔

a3w
a3w