تلنگانہ

تلنگانہ میں کرناٹک نتائج دہرائیں گے: راہول گاندھی

کانگریس قائد راہول گاندھی نے کہاکہ تلنگانہ میں کرناٹک کے نتائج دہرائے جائیں گے جس طرح کرناٹک میں بدعنوان بی جے پی حکومت کو گھرکا راستہ دکھایا گیا ویسے ہی تلنگانہ میں بدعنوان بی آر ایس حکومت کا کھیل ختم کردیا جائے گا۔

حیدرآباد: کانگریس قائد راہول گاندھی نے کہاکہ تلنگانہ میں کرناٹک کے نتائج دہرائے جائیں گے جس طرح کرناٹک میں بدعنوان بی جے پی حکومت کو گھرکا راستہ دکھایا گیا ویسے ہی تلنگانہ میں بدعنوان بی آر ایس حکومت کا کھیل ختم کردیا جائے گا۔

آج کھمم میں منعقد ہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے راہول گاندھی نے کہاکہ کے سی آر انتہائی بدعنوان شخص ہیں اور ان کی تمام کارستانیوں سے وزیر اعظم نریندرمودی واقف ہیں، مگر چونکہ دونوں ایک ہی ہیں اس لئے ان کے خلاف کارروائی نہیں کی جارہی ہے۔

بی آر ایس کو بی جے پی کی رشتہ دار جماعت بتاتے ہوئے راہول گاندھی نے کہاکہ عنقریب دونوں رشتہ داروں کی سیاست ختم ہوجائے گی۔ سابق صدر کل ہند کانگریس نے کہاکہ کے سی آر، دھرانی پورٹل کے نام پر غریب عوام کی زمینات پر قبضہ کررہے ہیں۔ ہم دھرانی پورٹل اور بی آر ایس کو خلیج بنگال میں پھینک دیں گے۔

انہوں نے کہاکہ ملک کے عوام میں بھائی چارگی کو فروغ دینے اور کانگریس کے نظریات کو عام کرنے کیلئے بھارت جوڑو یاترا شروع کی گئی تھی جس کے اچھے نتائج برآمد ہورہے ہیں۔ ا ٓج بھی ملک میں عوام کی اکثریت پرامن زندگی گزارنا چاہتی ہے۔ کانگریس عوام کے جذبہ کا احترام کرتی ہے۔

کانگریس قائدین کو پارٹی کی حقیقی طاقت قراردیتے ہوئے راہول گاندھی نے کہاکہ ہم کانگریس قائدین کے جذبہ کو سلام کرتے ہیں جنہوں نے مشکل حالات میں بھی پارٹی سے وابستگی کو برقراررکھا۔ کھمم اور تلنگانہ کو کانگریس کا مضبوط قلعہ قراردیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ یہاں کے عوام کے دلوں میں کانگریس بسی ہوئی ہے۔ عوام کی تائید وحمایت سے ”A“ اور ”B“ ٹیموں کا اتہ پتہ گم ہوجائے گا۔

کانگریس کے دروازے تمام سیکولر مزاج قائدین کیلئے کھلے رکھنے کا اعلان کرتے ہوئے راہول گاندھی نے کہاکہ کانگریس کے نظریات سے اتفاق رکھنے والوں کو ادھر اُدھر وقت ضائع کئے بغیر کانگریس میں شامل ہوجانا چاہئے۔ انہوں نے مزید کہاکہ تلنگانہ میں کانگریس کو اقتدار حاصل ہونے کے بعد معمرین اور معذورین کو ہر ماہ 4 ہزار روپئے پنشن دیا جائے گا۔

قائیلیوں کو جنگلات کی اراضی پر مالکانہ حقوق فراہم کئے جائیں گے۔ کسان ڈیکلریشن اور یوتھ ڈیکلریشن پر عمل کیاجائے گا۔ گزشتہ 9 سالوں میں بی آر ایس کی بدترین حکمرانی کی وجہ سے تباہ شدہ تلنگانہ کی تعمیر نو کی جائے گی۔ خوابوں کے تلنگانہ کو ترقی یافتہ اور خوشحال بنایاجائے گا۔

بے روزگاری ختم کرتے ہوئے نوجوانوں میں اعتماد بحال کیاجائے گا۔ شفاف حکمرانی فراہم کی جائے گی۔ صدر ٹی پی سی سی ریونت ریڈی نے خطاب کرتے ہوئے 9 دسمبر کو تشکیل تلنگانہ کا اعلان کیا گیا تھا، اس سال 9 دسمبر کو کانگریس تلنگانہ میں اقتدار حاصل کرے گی۔

سونیا گاندھی نے 1200 نوجوانوں کی قربانیوں کا احترام کرتے ہوئے عوام کو خوابوں کی ریاست تلنگانہ کا تحفہ دیا تھا۔ہم کانگریس کو اقتدار میں لاکر سونیا گاندھی کا قرض چکائیں گے۔ کے سی آر خاندان کا جزائر انڈومان تک پیچھا کیا جائے گا۔ کے سی آر کے نرغہ سے تلنگانہ کو نجات دلاکر حقیقی آزادی دی جائے گی۔

سی ایل پی قائد ملو بھٹی وکرامارکہ نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بی آر ایس کو خلیج بنگال میں پھینک دیاجانا طئے ہے۔ کے سی آر پر زبانی جمع خرچ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے سی ایل پی قائد نے کہاکہ کے سی آر نے ریاست کے عوام کے 9 سال ضائع کردیئے اور عوام ہرپل کا جواب مانگنے تیار ہیں۔

قبل ازیں سابق رکن پارلیمنٹ کھمم پی سرینواس ریڈی نے اپنے سینکڑوں حامیوں کے ہمراہ کانگریس میں شمولیت اختیار کرلی۔

a3w
a3w