مشرق وسطیٰ

منگنی سے انکار پر مصری نوجوان نے لڑکی کا قتل کر دیا

مصر میں تین ماہ کے دوران اپنی نوعیت کا تیسرا واقعہ اس وقت سامنے آیا جب ایک مصری نوجوان نے ایک لڑکی کو گولی مار کر ہلاک کر دیا۔

قاہرہ: مصر میں تین ماہ کے دوران اپنی نوعیت کا تیسرا واقعہ اس وقت سامنے آیا جب ایک مصری نوجوان نے ایک لڑکی کو گولی مار کر ہلاک کر دیا۔

سبق ویب سائٹ کے مطابق المنوفیہ یونیورسٹی کی طالبہ کو قتل کرنے کی وجہ یہ بتائی گئی کہ اس نے قاتل سے منگنی کرنے سے انکار کردیا تھا۔

پولیس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ احمد فتحی نامی نوجوان نے ہفتہ کے روز امانی عبد الکریم نامی لڑکی کو قاہرہ کے شمال میں واقع منوفیہ کمشنری میں گولی مار کر ہلاک کیا ہے۔

محلے کے رہائشی ابو حمزہ السلمی نے واقعے کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا ہے کہ ’وقوعہ کے روز قاتل لڑکی کے گھر کے پاس گھات لگاکے بیٹھا ہوا تھا‘۔’جیسے ہی وہ گھر سے نکلی تو پسٹول سے متعدد فائر کرکے لڑکی کو گرادیا۔

گھر والے اسے ہسپتال لے گئے لیکن راستے میں ہی وہ دم توڑ گئی‘۔ایک اور محلے دار محمود النادی نے کہا ہے کہ ’لڑکے نے لڑکی سے منگنی کا پیغام بھیجا تھا مگر انکار پر وہ غصے میں آگیا‘۔

’متعدد مرتبہ لڑکی کا پیچھا کرتے ہوئے پایا گیا اور ایک مرتبہ ایسا ہوا کہ لڑکی نے بھرے بازار میں اسے ڈانٹ دیا تھا‘۔

فائرکرنے کے بعد لڑکا موقع سے فرار ہوگیا تھا جسے بعد ازاں گرفتار کیا گیا ہے‘۔

a3w
a3w