تلنگانہ

ناگرکرنول میں کانگریس اور بی آرایس کارکن متصادم

کل رات ہوئے اس تصادم میں ایک گاڑی کے شیشوں کو نقصان پہچایاگیا اوردونوں جماعتوں کے بعض کارکن زخمی ہوگئے جن کو علاج کے لئے اسپتال منتقل کردیاگیا۔

حیدرآباد: تلنگانہ کے ضلع ناگرکرنول میں کانگریس اور بی آرایس کے کارکنوں میں تصادم کا واقعہ پیش آیا جس کے نتیجہ میں ضلع کے نلہ ملہ اچم پیٹ میں کشیدگی دیکھی گئی۔

متعلقہ خبریں
تلنگانہ:ایم ایل سی کی نشست کے ضمنی انتخاب کی مہم کااختتام
ترنمول کانگریس قائد کا قتل باروپور میں کشیدگی
تلنگانہ میں ٹی ایس کے بجائے ٹی جی استعمال کی ہدایت، احکام جاری
تلنگانہ میں آئندہ 24 گھنٹے میں تیز ہوائیں چلنے کا امکان
بی آر ایس کے مزید 2 امیدواروں کا اعلان، سابق آئی اے ایس و آئی پی ایس عہدیداروں کو ٹکٹ

کل رات ہوئے اس تصادم میں ایک گاڑی کے شیشوں کو نقصان پہچایاگیا اوردونوں جماعتوں کے بعض کارکن زخمی ہوگئے جن کو علاج کے لئے اسپتال منتقل کردیاگیا۔

لنگانہ کی حکمران جماعت بی آرایس کے رکن اسمبلی بالاراجو کی جانب سے رائے دہندوں میں رقم کی تقسیم کی اطلاع پا کر کانگریس کے کارکن بڑے پیمانہ پر وہاں جمع ہوگئے۔انہوں نے الزام لگایا کہ رائے دہندوں میں رقم کی تقسیم سے روکنے کی کوشش پر بی آرایس کارکنوں نے ان پر حملہ کردیاجس میں وہ زخمی ہوگئے۔

انہوں نے الزام لگایا کہ پولیس نے رکن اسمبلی کی بیوی کی کار کی تلاشی بھی نہیں لی۔کانگریس کے مقامی لیڈروں نے کہاکہ بالاراجو غنڈہ گردی کررہے ہیں۔

وہ تمام کو دھمکارہے ہیں۔وہ رات کے دس بجے کے بعد بھی انتخابی مہم چلارہے ہیں اورمواضعات پہنچ کر رقومات رائے دہندوں میں تقسیم کررہے ہیں۔کسی بھی طرح وہ کامیاب ہونا چاہتے ہیں کیونکہ ان کو ناکامی کا خوف ہے۔

انہوں نے پولیس کا جانبداری کا الزام لگایا اور کہاکہ پولیس نے رکن اسمبلی کے حامیوں کو رقم تقسیم کرنے سے نہیں روکا۔کانگریس کارکنوں او رلیڈروں کی جانب سے اس واقعہ کے خلاف دھرنادیاگیا اور نعرے بازی کی گئی۔پولیس نے دونوں جماعتوں کے کارکنوں کو منتشر کردیا۔

a3w
a3w