انٹرٹینمنٹ

سلمان خان کے گھر پر فائرنگ کیس، ایک ماہ بعد چھٹا ملزم ہریانہ سے گرفتار

تحقیقات کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ ہرپال سنگھ نے رفیق چودھری کو سلمان خان کے گھر کی ریسکیو کرنے کے لیے کہا تھا اور اسے 2 سے 3 لاکھ روپے بھی دیے تھے۔

ممبئی: فلم اداکار سلمان خان کے گھر پر فائرنگ کیس میں ٹھیک ایک ماہ بعد آج ممبئی پولیس نے سلمان خان کے گھر پر فائرنگ کے معاملے میں چھٹے ملزم ہرپال سنگھ (34) کو فتح آباد، ہریانہ سے گرفتار کیا ہے۔ ممبئی پولیس ہرپال سنگھ کو منگل کی صبح ہریانہ سے ممبئی لے گئی اور اسے عدالت بھیجنے کی تیاری کر رہی ہے۔

متعلقہ خبریں
فائرنگ کیس: لارنس بشنوئی کے چھوٹے بھائی انمول بشنوئی کے خلاف لک آوٹ سرکیولر
سارہ علی خان نے ’ اے وطن میرے وطن‘ کی شوٹنگ مکمل کرلی
خود ساختہ فائنانس ڈپارٹمنٹ کا ایڈیشنل سکریٹری گرفتار
سعودی عرب میں لڑکی سے غیر اخلاقی حرکت پر ہندوستانی شہری گرفتار
خودساختہ ڈاکٹر گرفتار۔ 2 سل فونس، میڈیکل اشیاء ضبط

معلومات کے مطابق 14 اپریل کو ممبئی کے باندرہ علاقے میں گلیکسی اپارٹمنٹ میں واقع سلمان خان کی رہائش گاہ کے باہر موٹر سائیکل سوار دو افراد نے فائرنگ کی اور موقع سے فرار ہو گئے۔ اس کے بعد ممبئی پولیس نے دونوں ملزمان کو گجرات سے گرفتار کر لیا۔

 اس کے بعد پولیس نے دو دیگر ملزمان کو گرفتار کر لیا جنہوں نے ان دونوں ملزمان کو اسلحہ دیا تھا۔ ان میں سے ایک ملزم نے پولیس لاک اپ میں خودکشی کر لی جس کی تفتیش سی آئی ڈی کی ٹیم کر رہی ہے۔ اس معاملے میں پولیس نے محمد رفیق چودھری کو ملزم کو مالی مدد فراہم کرنے کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔

تحقیقات کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ ہرپال سنگھ نے رفیق چودھری کو سلمان خان کے گھر کی ریسکیو کرنے کے لیے کہا تھا اور اسے 2 سے 3 لاکھ روپے بھی دیے تھے۔ اس لیے ممبئی پولیس نے رفیق چوہدری کے کہنے پر ہرپال سنگھ کو ہریانہ سے گرفتار کیا ہے۔

 اس طرح پولیس اس معاملے میں اب تک چھ ملزمان کو گرفتار کر چکی ہے۔ احمد آباد کی سابرمتی سینٹرل جیل میں بند لارنس بشنوئی اور ان کے چھوٹے بھائی انمول بشنوئی کو اس معاملے میں شریک ملزم بنایا گیا ہے۔