مشرق وسطیٰ

اسرائیل میں عدالتی اصلاحات کیخلاف ہزاروں افراد کا احتجاج

احتجاج کے منتظمین نے بتایا کہ ملک بھر میں 12 سے زائد ریلیاں نکالی گئیں۔ اگرچہ وزیر اعظم نتن یاہو نے عدالتی اصلاحات میں تبدیلیوں کا وعدہ کیا ہے۔

تل ابیب: وزیر اعظم بنجامن نتن یاہو کی عدالتی اصلاحات کے خلاف مسلسل 32 ویں ہفتے ہفتہ کے روز ہزاروں لوگ تل ابیب کی سڑکوں پر احتجاج کرتے ہوئے نکل آئے۔

متعلقہ خبریں
نیتن یاہو نے کم وسائل میں بھی لڑنے کا اعلان کیا
دونوں جماعتوں نے حیدرآباد کو لیز پر مجلس کے حوالے کردیا۔ وزیر اعظم کا الزام (ویڈیو)
ویڈیو: اسرائیل میں حکومت کے خلاف ہنگامے پھوٹ پڑے
حماس کی شرائط منظور نہیں: نتن یاہو
وزیر اعظم کے ہاتھوں اے پی میں این اے سی آئی این کے کیمپس کا افتتاح

احتجاج کے منتظمین نے بتایا کہ ملک بھر میں 12 سے زائد ریلیاں نکالی گئیں۔ اگرچہ وزیر اعظم نتن یاہو نے عدالتی اصلاحات میں تبدیلیوں کا وعدہ کیا ہے۔

تل ابیب کے علاقے میں جہاں سرکاری عمارتیں واقع ہیں وہاں پھر سے ٹریفک مقررہ حد سے زیادہ ہوگیا۔ یروشلم پوسٹ نے اطلاع دی ہے کہ تین فلسطینیوں کو غیر قانونی طور پر اسرائیل میں داخل ہونے پر حراست میں لیا گیا ہے۔

مظاہرین نے متنبہ کیا کہ اگر دائیں بازو کی حکومت سرکاری فیصلوں کو پلٹنے کی نے ججوں کی صلاحیت کو محدود کرنے کے اپنے متنازعہ منصوبے پر زور دیتی ہے جسے وہ نامناسب سمجھتے ہیں تو قومی معیشت ٹھپ ہوجائے گی۔

حزب اختلاف کے لیڈر یائر لاپڈ نے سنیچر کے احتجاج میں شامل ہو کر نتن یاہو کی حکومت سے قانون کی تعمیل کرنے کا مطالبہ کیا۔ انہیں مظاہرے کے دوران کپلان اسٹریٹ پر بھیڑ کے ساتھ چلتے ہوئے دیکھا گیا۔