مشرق وسطیٰ

ٹینکوں کی مدد سے پیدل اسرائیلی فوج نےغزہ کی پٹی میں دراندازی کی

اسرائیلی فوج کے چیف ترجمان نے انکشاف کیا کہ ٹینکوں کی مدد سے پیدل فوج نے جمعہ کے روز غزہ کی پٹی میں دراندازی کی ہے۔ فضائی حملوں کے بعد یہ زمینی دراندازی کا آغاز ہے۔

یروشلم: اسرائیلی فوج کے چیف ترجمان نے انکشاف کیا کہ ٹینکوں کی مدد سے پیدل فوج نے جمعہ کے روز غزہ کی پٹی میں دراندازی کی ہے۔ فضائی حملوں کے بعد یہ زمینی دراندازی کا آغاز ہے۔

متعلقہ خبریں
برطانیہ میں سیکل رانوں کی مہم، غزہ کیلئے فنڈس جمع کئے جارہے ہیں
اسرائیل بین الاقوامی عدالتِ انصاف کے تمام فیصلوں پر جلد عمل درآمد کرے: ترکیہ
جنگ بندی مذاکرات میں پیش رفت نہیں ہوپائی: حماس
اسرائیلی جیلوں میں فلسطینی قیدیوں سے انسان سوز سلوک کے شواہد سامنے آگئے
غزہ کے انڈونیشیا ہاسپٹل پر اسرائیلی بمباری، ایک درجن فلسطینی شہید

العربیہ کے مطابق ایڈمرل ڈینیل ہجاری نے ایک ٹیلی ویژن بریفنگ میں کہا کہ یہ زمینی حملے فلسطینی راکٹ برسانے والے عملے کے ارکان کو نشانہ بنانے اور یرغمال بنائے گئے افراد کے مقامات کی معلومات اکٹھا کرنے کے لیے کئے گئے ہیں۔

اسرائیلی فوج نے جمعہ کے روز یہ اعلان بھی کیا کہ اس کی زمینی اور بکتر بند افواج نے گنجان آباد غزہ کی پٹی پر متوقع زمینی حملے سے قبل گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں غزہ کی پٹی پر چھاپہ مار کارروائی کی ہے۔ اس کارروائی کا مقصد دہشت گردوں اور ہتھیاروں کی تلاش ہے۔ اسرائیل کی ان کارروائیوں کے دوران فضائی بمباری بھی مسلسل جاری رہی۔

دونوں فریقوں کے درمیان جنگ اس وقت شروع ہوئی تھی جب حماس نے 7 اکتوبر کو اسرائیل پر آپریشن ’’ طوفان الاقصٰی‘‘ شروع کردیا تھا۔ اس لڑائی کے پہلے سات روز میں 1800 فلسطینی شہید ہو چکے۔ دوسری طرف 1300 اسرائیلی مارے گئے ہیں۔

a3w
a3w